خورشید قصوری کی کتاب کی تقریب رونمائی کے میزبان سے شیو سینا کی حرکت پر سرکاری سطح پر احتجاج کیا جائے ،ہائی کورٹ بار کا مطالبہ

خورشید قصوری کی کتاب کی تقریب رونمائی کے میزبان سے شیو سینا کی حرکت پر سرکاری ...
خورشید قصوری کی کتاب کی تقریب رونمائی کے میزبان سے شیو سینا کی حرکت پر سرکاری سطح پر احتجاج کیا جائے ،ہائی کورٹ بار کا مطالبہ

  


لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ بار نے بھارت میں سابق وزیرخارجہ میاں خورشید محمود قصوری کی کتاب کی تقریب رونمائی کے میزبان کے ساتھ شیو سینا کی شرمناک حرکت کی شدید مذمت کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اس واقع کے خلاف بھارتی ہائی کمشنر کو وزارت خارجہ کے دفتر میں طلب کرکے احتجاج ریکارڈ کرایا جائے ۔ہائی کورٹ بار نے اس سلسلے میں محمود جوئیہ ایڈووکیٹ کی طرف سے پیش کی جانے والی قرارداد متفقہ طور پر منظور کرتے ہوئے قرار دیا کہ شیو سینا کی اس غیر اخلاقی اور شرمناک حرکت سے بھارت کا انتہا پسندانہ چہرہ عالمی برادری کے سامنے عیاں ہوگیا ہے ۔

تقریب کے مہمان خصوصی امریکہ میں مقیم سماجی اصلاحات پر قانون سازی کے مشہور مصنف آغا محمد صالح نے ہائی کورٹ بار سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے نیو یارک امریکہ میں "سکھی نیو یارک "کے نام سے تنظیم بنائی ہے جسکا مقصد بین المذاہب ہم آہنگی کوفروغ دینا ہے تاکہ آنیوالی نسلیں امن و سکون سے رہ کر خوشحالی سے ہمکنار ہو سکیں۔ انہوں نے کہا کہ بے پناہ مالی وسائل کی موجودگی میں عوام بھوک ، افلاس ، بے یقینی کی کیفیت، امراض کا شکار، انصاف کے حصول میں تاخیر اور ناانصافی کا شکار ہیں۔ ہمارا بنیادی مقصد تمام مذاہب کے پیروکاروں میں روحانی بیداری اجاگر کرنا ہے تاکہ دہشت گردی کا مقابلہ کرتے ہوئے رواداری اور امن و سکون سے زندگی بسر کی جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت میں میاں خورشید محمود قصوری کی تقریب کے میزبان کے ساتھ شرمناک سلوک قابل مذمت ہے ،اس حرکت سے سیکولر بھارت کا چہرہ بری طرح مجروح ہوا ہے ۔ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سیکرٹری بیرسٹر محمد احمد قیوم نے کہا کہ موجودہ بھارتی حکومت کے رویہ سے دو قومی نظریہ کو تقویت ملی ہے۔

انہوں نے شیوسینا کی شرمناک حرکت کی بھر پور مذمت کی۔ محمد اظہر صدیق ایڈووکیٹ نے کہا کہ حکومت پاکستان کو اس واقع کا نوٹس لیتے ہوئے بھارتی حکومت کے رویہ کے خلاف سفارتی سطح پر کاروائی عمل میں لانی چاہیے۔قائم مقام صدر لاہور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن ایم عرفان عارف شیخ نے سانحہ ڈسکہ کیس کی پیش رفت کے حوالے سے ہاﺅس کو آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر صفائی کے وکلاءنے مزید مہلت نہ مانگی تو کیس کا فیصلہ جلد متوقع ہے۔اجلاس میں جسٹس(ر) چودھری اعجاز احمد، حافظ نعیم چودھری ایڈووکیٹ (قصور) کے بھائی،ذوالقرنین خان(ریٹائرڈ سیشن جج) ،چودھری اسحاق گجر سابق ممبر پنجاب بار کونسل کی والدہ اوربشیر احمد سینئر نائب قاصد لاہور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کی ارواح کو ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی بھی کی گئی ۔ اجلاس کے بعد سانحہ ڈسکہ کے خلاف لاہور ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے عہدیداروں اور بار کے ممبران نے احتجاجی کیمپ میں اپنا احتجاج ریکارڈ کرایا۔

مزید : لاہور


loading...