چودھری نثاراور خواجہ آصف کے اختلافات کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آگئی

چودھری نثاراور خواجہ آصف کے اختلافات کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آگئی
چودھری نثاراور خواجہ آصف کے اختلافات کے پیچھے چھپی اصل کہانی سامنے آگئی

  


لاہور(سٹاف رپورٹر)وزیرداخلہ چودھری نثاراوروزیردفاع خواجہ آصف کے کشیدہ تعلقات خود وزیراعظم کے لئے بھی دردسربن گئے ہیں،معاملہ اس قدرخراب ہے کہ وزیراعلی شہبازشریف کی مفاہمتی کوششیں بھی بارآورثابت نہیں ہوسکیں،بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ چودھری نثاراورخواجہ آصف میں کس بات پراختلاف شروع ہوا اورنوبت یہاں تک آپہنچی کہ اب دونوں میں بول چال تک بند ہےجس کی دونوں رہنماء خود تصدیق بھی کرچکے ہیں،ایک وقت پرقریبی دوست سمجھے جانے والے خواجہ آصف اورچودھری نثارکے تعلقات میں دراڑدوہزارتیرہ کے عام انتخابات سے پہلے ہی آنا شروع ہوگئی تھی اوراس کی وجہ بنے چکوال کے سابق ضلع ناظم سردارغلام عباس۔

بات اس وقت شروع ہوئی جب سردارغلام عباس کے شریف فیملی کے انتہائی قریبی سمجھے جانے والے بڑے صنعت کارکے ساتھ گہرے مراسم استوارہوئے،سردارغلام عباس نے اپنے علاقے میں اسی صنعت کارکی فیکٹری لگوانے میں اہم کردارادا کیاجس پرخوش ہوکرمعروف صنعت کارنے سردارغلام عباس کو ن لیگ میں آنے کی دعوت دی جو کچھ عرصہ پہلے ہیں پی ٹی آئی جوائن کرچکے تھے،سردارغلام عباس سے قومی اسمبلی کے لئے ن لیگ کا ٹکٹ دلوانے کا وعدہ بھی کیاگیا۔

2013 کے عام انتخابات سے کچھ عرصہ قبل اسی صنعت کارنے اپنے دوست خواجہ آصف کے ذریعے سردارغلام عباس کو ٹکٹ دلوانے کے لئے کوششیں شروع کردیں اورانہوں نے سردارغلام عباس کو ٹکٹ دلوانے کے لئے پارٹی میں لابنگ بھی  کی،دوسری طرف چودھری نثارجوپوٹھوہارریجن میں ن لیگ کے اہم ترین رہنما ہیں اوروہ اپنے اختیارات میں مداخلت کے حوالے سے بڑے حسا س واقع ہوئے ہیں ۔انہوں نے سردارغلام عباس کو ٹکٹ دینے کی مخالفت کردی اوراپنی ان کوششوں میں کامیاب بھی رہے،یہیں سے خواجہ آصف کے چودھری نثارکے ساتھ تعلقات خراب ہونا شروع ہوئے جنہیں اپنے صنعت کاردوست کے سامنے شرمندگی اٹھانی پڑی ۔

دوہزارتیرہ میں ن لیگ کی حکومت قائم ہونے کے بعدخواجہ آصف اورچودھری نثارکے تعلقات میں بہتری آنے کے بجائے یہ مزیدبگڑتے چلے گئے،بات اتنی بڑھی کہ چودھری نثارکے وزیراعظم کے ساتھ تعلقات بھی کشیدہ ہوگئے،چودھری نثارکو گلہ تھا کہ وزیراعظم کابینہ کے چندوزراءکے ایما پران کی وزارت میں غیرضروری مداخلت کررہے ہیں،چودھری نثارکا خیال تھا کہ اس کام میں بھی خواجہ آصف پیش پیش ہیں اور یوں کابینہ کے ان دواہم وزراءمیں تعلقات کی خلیج گہری ہوتی گئی اورمعاملات اس نہج تک پہنچ گئے کہ چودھری نثاراورخواجہ آصف میں برسوں سے علیک سلیک بھی نہیں ہوئی۔

مزید : قومی /اہم خبریں


loading...