بجلی چوری‘ مختلف اداروں کی رپورٹ وزیراعلیٰ ٹاسک فورس کو بھجوانے کا فیصلہ

  بجلی چوری‘ مختلف اداروں کی رپورٹ وزیراعلیٰ ٹاسک فورس کو بھجوانے کا فیصلہ

  



رحیم یارخان(بیورورپورٹ) میپکو سمیت بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں نے پولیس سمیت حکومتی ادارو ں کی جانب سے بجلی کے غیر قانونی استعمال کی صوبائی حکومت کو رپورٹ کرنے کا فیصلہ کیاہے،ذرائع کے مطابق مقامی سطح پر اداروں کے مابین ٹکراؤ کی صورتحال سے بچنے کے لئے یہ فیصلہ کیاگیاہے کہ(بقیہ نمبر59صفحہ12پر)

ڈائریکٹ سپلائی کے ذریعے بجلی چوری کرنے والے اداروں‘ محکموں‘ تھانوں اور پولیس چوکیو ں کی فہرست وزیر اعلی ٰ پنجاب ٹاسک فورس کو بھجوائی جائے تاکہ نہ صرف ایکشن ہو سکے بلکہ مستقبل میں میٹروں کے ذریعے بجلی کی فراہمی ممکن ہو سکے،دریں اثنا وزارت توانائی (پاور ڈویژن) نے بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں سے مختلف وجوہات کی بنا پر معطل کئے گئے افسروں اور اہلکارو ں کے خلاف کارروائی کی رپورٹ طلب کرلی ہے،میپکو سمیت بجلی کمپنیو ں نے گزشتہ3ماہ کے دوران 200سے زائد افسروں اور اہلکاروں کو معطل کیاہے، ان پر کرپشن‘ غفلت اور لاپروائی کے الزامات ہیں،ذرائع کے مطابق وزارت توانائی نے موجودہ حکومت کی پالیسی کے تحت کرپٹ افسروں و اہلکار و ں کے خلاف کارروائی شروع کر رکھی ہے۔

ادارے ٹکراؤ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...