علماء کو حقارت کی نظر سے دیکھنا دین سے  دوری کا سبب بن سکتا ہے‘ سلطان احمد علی 

علماء کو حقارت کی نظر سے دیکھنا دین سے  دوری کا سبب بن سکتا ہے‘ سلطان احمد ...

  



مخدوم رشید (نامہ نگار)  صاحبزادہ سلطان احمد علی نے کہا کہ علماء کرام کی عزت و تکریم دین کے بقاء کی علامت ہے، انہیں حقارت کی نظر سے دیکھنا دین سے دوری کا سبب بن سکتا ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے مخدوم رشید میں کل(بقیہ نمبر52صفحہ12پر)

 پاکستان سالانہ روحانی محفل شبِ مستغاث کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا، انہوں نے مزید کہا کہ اسلام صبر و استقامت کا درس دیتا ہے، آج جدید دور میں بھی درسِ نظامی کے کورس میں تھوڑی سی تبدیلی کر کے آکسفورڈ یونیورسٹی میں اسلامی تعلیم دی جار ہی ہے، جبکہ ہمارے معاشرے میں علماء کو حقارت کی نظر سے دیکھا جاتا ہے، اس موقع پرسابقہ ڈائریکٹر کالجز محمد حسین آزاد اور علامہ غضنفر حسنین تونسوی نے بھی خطاب کیا، سٹیج سیکرٹری کے فرائض عزیز عبداللہ ہاشمی، وقارعلی سعیدی اور ساہیوال سے شکیل خان قادری نے سرانجام دئیے، قاری سجاد ہاشمی، قاری حق نواز سعیدی، قاری نذیر احمد قادری نے پُرسوز آواز میں قرآن مجید کی تلاوت کی، جبکہ نعت خوانوں میں غلام شبیر ہاشمی، سید احتشام عباس، کاشف نیاز، خاور علی قادری، عبدالخالق قادری، محمد ریحان رؤفی، محمد سجاد نقشبندی، محمد احمد ہاشمی، محمد نواز شاہ مہروی، حمید نواز عاصم، احمد نواز عصیمی، سید محمد احمد گیلانی، جعفر عباس، ملک خضر حیات تھہیم سمیت دیگر نے عقیدت کے پھول نچھاور کئے، جبکہ مہمانانِ گرامی میں سینئر سیاست دان مخدوم جاوید ہاشمی، سابق وزیر اعظم سید یوسف رضا گیلانی،محمد انور شاہ گیلانی سجادہ نشین سدرہ شریف، مخدوم ابوالحسن جمال الدین گیلانی موسیٰ پاک شہید، احمد مسعود چشتی سجادہ نشین پاکپتن شریف، خواجہ غلام محی الدین فخری دربار خانقاہ فخریہ دہلویہ انڈیا، خواجہ علی نواز فقیر نواب شاہ سندھ، مخدوم راشد شبیر اوچشریف، مخدوم محمد ندیم ہاشمی خیر پور سندھ، محمد ناصر میاں خان، سردار محمد شاکرمزاری، کمال الدین معظمی دربار معظم آباد شریف سرگودھا سمیت مختلف درگاہوں کے سجادہ نشین، علماء کرام قراء حضرات، نعت خوانان نے پروگرام میں شرکت کی، پروگرام کے میزبان مخدوم شہباز شاہ ہاشمی، پروفیسر ڈاکٹر اشفاق احمد شاہ، مخدوم محمد شاہ ہاشمی تھے، ملک بھر سے ہزاروں افراد نے شرکت کی، محفل صبح 4بجے تک تسلسل سے جاری رہی اورفضاء درود و سلام کی صداؤں سے رات بھر معطر رہی۔ 

احمد علی 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...