ایم ٹی آئی ایکٹ سے متعلق گمراہ کن پراپیگنڈہ بند کیا جائے‘ یاسمین راشد 

ایم ٹی آئی ایکٹ سے متعلق گمراہ کن پراپیگنڈہ بند کیا جائے‘ یاسمین راشد 

  



 ملتان (خبر نگار خصوصی) صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا ہے کہ میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوشنل ریفارمز ایکٹ ہرگز سرکاری ہسپتالوں کی نجکاری نہیں ہے،ہڑتال پر موجود ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس سے اپیل ہے کہ غریب مریضوں کی خاطر ہڑتال چھوڑ دیں اور کام کریں،ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز لاہور سیکرٹریٹ میں اعلی سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا(بقیہ نمبر32صفحہ12پر)

 اس موقع پر وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفیٰ کمال پاشا سمیت دیگر سرکاری ٹیچنگ ہسپتالوں کے سربراہان سمیت تمام اعلی افسران موجود تھے،منسٹر ہیلتھ ڈاکٹر یاسمین راشد نے اس موقع پر کہا کہ ایم ٹی آئی ایکٹ سے متعلق گمراہ کن پراپیگنڈا بند کیا جائے،اس ایکٹ کے تحت کسی سرکاری ہسپتال کی نجکاری نہیں کی جا رہی،بورڈ آف گورنرز میں باصلاحیت سینئر ڈاکٹرز کی تعداد میں اضافہ کر رہے ہیں،آوٹ ڈور میں انفراسٹرکچر کی فراہمی کے بعد ہی انسٹی ٹیوشنل پریکٹس  شروع کی جائیگی،جاب سیکیورٹی کے حوالے سے گرینڈ ہیلتھ الائنس اور تمام ملازمین کے تحفظات دور کئے جائیں گے,دریں اثناء میٹنگ میں حصہ لینے کے بعد وائس چانسلر نشتر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر مصطفی کمال پاشا نے کہا کہ گرینڈ ہیلتھ الائنس  مذاکرات کے ذریعے معاملات کو حل کرے ان سے اپیل ہے کہ ہڑتال کرکے کر مریضوں کا علاج کریں جو ہمارا فرض ہے میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوشن ایکٹ کے خلاف گرینڈ ہیلتھ الائنس پنجاب کی کال پر صوبہ بھر کی طرح ملتان میں آج بھی نشتر اور چلڈرن ہسپتال میں چوتھے روز ہڑتال ہو گی،شعبہ آوٹ ڈور، آپریشن ٹھیٹرز،ریڈیالوجی اور پتھالوجی مکمل بند رہے گا، آپریشن لسٹیں بھی منسوخ ہونے کا خدشہ ہے  ملتان گرینڈ ہیلتھ آلائنس کی جانب سے  میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوشن ایکٹ کے خاف آج بھی نشتر ہسپتال اور چلڈرن ہسپتال میں احتجاجی مظاہرہ  و ہڑتال کی  جائے گی، ڈاکٹرز، پیرامیڈیکس، نرسز سمیت دیگر ملازمین کی جانب سے احتجاجا شعبہ آوٹ ڈور، آپریشن تھیٹرز، ریڈیالوجی اور پیتھالوجی میں کام نہیں کیا جائے گا، جس کی وجہ سے یہ شعبہ جات مکمل بند رہیں گے،اس حوالے سے گرینڈ ہیلتھ آلائنس ملتان کے رہنما ڈاکٹر فاران اسلم، رانا عامر و دیگر کا کہنا ہے کہ ایم ٹی آئی ایکٹ ایک ایسا ظالمانہ ایکٹ ہے جس کے ذریعے ڈاکٹروں، نرسز سمیت دیگر ملازمین کی سرکاری حثیت ختم ہو جائے گی، غریب عوام سے مفت علاج کی سہولت چھینی جا رہی ہے،انہوں نے کہا کہ اس کالے قانون کو ہرگز سرکاری ہسپتالوں میں لاگو نہیں ہونے دیں گے، مطالبات کی منظوری تک ہڑتال و احتجاجی مظاہرے جاری  رہیں گے۔

یاسمین راشد 

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...