موجودہ سنگین صورتحال میں ملک کسی محاذآرائی کا متحمل نہیں ہوسکتا،تاجر برادری

موجودہ سنگین صورتحال میں ملک کسی محاذآرائی کا متحمل نہیں ہوسکتا،تاجر برادری

  



کراچی (این این آئی) تنظیم تاجران پاکستان کے صدر کاشف چودھری نے آل کراچی جیولرز اینڈ مینوفیکچررز ویلفیئر ایسوسی ایشن (رجسٹرڈ) اورانجمن تاجران سینٹرل کراچی کے مرکزی قائدین صدرمحمدحسِین قریشی،سیکریٹری جنرل سید راشدعلی شاہ، سینئر نائب صدر محمدیاسین،سرپرست اعلیٰ شہزادہ اصلاح الدین،عدنان صدیقی،مشیراحمد،کمال نجم الدین، ارشاداحمدخان ودیگر سے ملاقات کی اور ملکی حالات سمیت تاجروں کودرپیش صورتحال پر تبادلہء خیال کیا۔کاشف چودھری نے اپنی گفتگومیں کہاکہ حکومت معاشی ابتری کے خاتمے اور معیشت کی بحالی کے لئے تاجروں میں پھیلی بے چینی اور تشویش،خدشات اور تحفظات کودورکرے کیونکہ ملکی صورتحال اور موجودہ سنگین حالات میں ملک کسی بھی طرح کی محاذ آرائی،احتجاجوں، ہڑتالوں اور لانگ مارچ یادھرنوں کا متحمل نہیں ہوسکتاجبکہ تاجران پاکستان حکومت سے ہر ممکن تعاون اور ٹیکس کلچر کے فروغ میں بھی شانہ بشانہ ہیں۔

حکومت سنجیدگی اختیارکرتے ہوئے بڑے پن کا مظاہرہ کرے اور چھوٹے تاجروں کو اعتماد میں لے کر مذاکرات کے فیصلہ کن نتائج تک کسی بھی قسم کے نوٹسز بھیجنے کا سلسلہ بندکرے،خریداروں کے لئے شناختی کارڈز کی شرط فی الحال منسوخ کی جائے۔انہوں نے کہاکہ حکومت ان معاملات کو سنجیدہ لے اور وزیراعظم عمران خان خود چھوٹے تاجروں سے ملاقات کریں تاکہ انہیں صحیح صورتحال کاعلم ہوسکے، انہوں نے کہاکہ حکومت ہمارے جائز مطالبات پر توجہ دے کر تمام متنازعہ معاملات باہمی مشاورت سے قابل قبول بناکر ٹیکس اصلاحات کو غیر متنازعہ،آسان اور سہل بنائے۔

انہوں نے کہاکہ حکومت تاجردوستی سے سے ہی معیشت وتجارت میں بہتری آسکتی ہے۔تاجر برادری سے ملاقات میں کاشف چودھری نے مظلوم کشمیری مسلمانوں پر جاری بھارتی وحشیانہ ظلم وستم، درندگی اور مسلسل کرفیو سے کشمیریوں کو گھروں میں قید رکھنے کے غیر انسانی فعل کی پرزورمذمت کرتے ہوئے اپنے کشمیری بھائیوں سے مکمل یکجہتی کااظہارکیا۔انہوں نے حکومت کی جانب سے کشمیر کاز کو عالمی سطح پر عمدگی سے اجاگر کرنے پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے اپنی مکمل حمایت کااعلان کیا۔کاشف چودھری نے کہاکہ ہم حکومت سے امید رکھتے ہیں کہ وہ تاجروں میں پھیلی مایوسی،تشویش اور تحفظات کا ازالہ یقینی بنانے کے لئے تاجروں کے حقیقی نمائندوں سے مشاورت کرکے ایک مربوط اور متفقہ لائحہء عمل بناکر ملک اور معیشت کو محفوظ بنائے گی۔انہوں نے مطالبہ کیاکہ حکومت کچھ لواور کچھ دوکے تحت حکومت تاجردوستی کو مضبوط کرکے بے مثال بنائے اورتمام فیصلے تاجرنمائندوں کو اعتماد میں لے کرکرے جبکہ جب تک مذاکرات کا عمل جاری ہے کسی تاجر کونوٹس نہ بھیجے جائیں،علاوہ ازیں چھوٹے تاجروں کوبھی اعتماد میں لے کر فیصلے کیئے جائیں۔اس موقع پر آل کراچی جیولرزاینڈمینوفیکچررزویلفیئر ایسوسی ایشن اور انجمن تاجران سینٹرل کراچی کی جانب سے تنظیم تاجران پاکستان کے صدر کاشف چودھری کو سندھ کی ثقافت اجرک کا تحفہ پیش کیاگیا۔

مزید : کامرس