ایمبولینس میں موٹر سائیکل چرا کر لے جانے والاگروہ سرغنی سمیت پکڑا گیا

ایمبولینس میں موٹر سائیکل چرا کر لے جانے والاگروہ سرغنی سمیت پکڑا گیا

  



کراچی (کرائم رپورٹر) ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسزاوجھا کیمپس سے ایمبولینس میں موٹرسائیکل چرا کر لاڑکانہ لے جانے والا گروہ اپنے مبینہ سرغنہ سمیت پکڑا گیا۔ ڈاؤ کے انتظامی اہلکاروں نے دو ملزمان کو رنگے ہاتھوں پکڑ کر تین موٹرسائیکل اور ایمبولینس ڈرائیور عمران جمالی سمیت سچل پولیس کے حوالے کردیا۔ ڈرائیور عمران جمالی موٹرسائیکل چور گروہ کا سرغنہ بتایا جاتاہے۔ تفصیلات کے مطابق ڈا یونیورسٹی کے پرو وائس چانسلر اور ڈائریکٹر اوجھا کیمپس پروفیسر کرتار ڈاوانی نے کیمپس سے موٹرسائیکل چوری ہونے کی شکایات کے بعد سیکیورٹی پر مامور عملے کو کڑی نگرانی کی ہدایت کی جس پراتوار کے روز کیمپس سے چوری ہونے والی موٹرسائیکل کی کیمپس میں موجودگی کے بعد اس کی خفیہ نگرانی کی۔ٓجیسے ہی 2ملزمان 2مزیدموٹرسائیکلوں کے ساتھ مشکوک موٹرسائیکل کے قریب پہنچے۔ سیکیورٹی اہلکاروں نے انہیں پکڑلیا۔ اسی دوران  اپنی بد قسمتی کے باعث ایمبولینس ڈرائیور بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گیا جس پر اسے بھی دھرلیا گیا۔ ملزمان کو سچل پولیس کے حوالے کردیا گیا۔اس دوران ملزمان محمد بخش  ولد خادم حسین اور زاہد حسین  ولد دل مرادنے بتایا کہ وہ پہلے وارداتیں کر کے یہاں سے موٹر سائیکلیں ایمبولینس میں رکھ کر لے جاتے رہے ہیں۔ ڈاؤ یونیورسٹی کے ترجمان کے مطابق ملزمان کو قانونی کارروائی کے لیے سچل پولیس کے حوالے کردیا گیا جو ملزمان سے مزید تفتیش کررہی ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...