فواد چوہدری کی بات سے متحدہ اور پی ٹی آئی کے درمیان ماحول خراب ہو ا : گورنر سندھ

  فواد چوہدری کی بات سے متحدہ اور پی ٹی آئی کے درمیان ماحول خراب ہو ا : گورنر ...

  



کراچی ( اسٹاف رپورٹر) گورنرسندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان سے متعلق فواد چوہدری کی بات سے پی ٹی آئی اورایم کیو ایم کے درمیان ماحول خراب ہوا ہے تاہم متحدہ ہماری اتحادی ہے اور رہے گی،اسٹریٹ کرائم کی روک تھام کے لیے کراچی کو سیف سٹی بنانا وقت کی اہم ضرورت ہے، کراچی میں شوکت خانم اسپتال کی تعمیر سے سندھ کی عوام کو علاج کی بہترین سہولیات میسر آئیں گی اس وقت شوکت خانم اسپتال سے 80فیصد مریضوں کو بلامعاوضہ علاج کی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہیوی بائیک چلا کر ریلی کا سی ویو سے افتتاح کے موقع پر کیا۔ ریلی رائڈ فار کاز پاکستان کے زیر اہتمام چھاتی کے کینسر کے بارے میں آگاہی کے لیے منعقد کی گئی ، ریلی سی ویو سے شروع ہوکر شوکت خانم اسپتال ڈی ایچ اے فیز 7 پر اختتام پزیر ہوئی ، ریلی میں 250 سے زائد مختلف اقسام کی ہیوی بیکرز نے شرکت کی ، شوکت خانم اسپتال کی ڈاکٹر سدرہ زہرہ نے چھاتی کے کینسر کے بچاﺅاور علاج کے بارے میں شرکا ءکو آگاہی فراہم کی ، ہیوی بائیکرز نے 25 لاکھ روپے بطور عطیہ دیا جبکہ انفرادی طور پر بھی عوام کی بڑی تعداد نے اس کارخیر میں حصہ ڈالا۔گورنرسندھ نے کہا کہ پاکستان میں لوگ دل کھول کے عطیات دیتے ہیں لیکن ٹیکس نہیں دیتے،شوکت خانم میرے دل میں ہے، ہماری خواہش تھی کہ شوکت خانم کراچی میں بنے، کراچی سے لوگ علاج کے لئے باہر جاتے تھے، دنیا میں ایسے ادارے کم ہیں جہاں کینسر کا علاج مفت کیا جا سکے، شوکت خانم وہ ادارہ ہے جس نے چندے میں کبھی خیانت نہیں کی، جب تک کینسر کی آگاہی نہیں ہوگی اس کا علاج ممکن نہیں ہوسکے گا۔انہوں نے کہاکہ پورے ملک کے مقابلہ میں کراچی سے سب سے زیادہ عطیہ شوکت خانم کو دیا جاتا ہے کیونکہ عوام کا بھرپوراعتماد شوکت خانم اسپتال کی انتظامیہ پر ہے۔انہوں نے کہا کہ چھاتی کینسر سے متعلق آگاہی انتہائی ضروری ہے جب تک کینسر کی آگاہی نہیں ہوگی اس کا علاج ممکن نہیں ہوسکے گا چھاتی کینسر کی اگر ابتدائی مراحل میں تشخیص ہوجائے تو علاج میں آسانی ہوتی ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران اسماعیل نے کہا کہ ایم کیو ایم اور پی ٹی آئی میں کچھ نہیں چل رہا، خواجہ اظہار سے کل بات ہوئی فواد چوہدری نے جو بات کی اس سے ماحول خراب ہوا، وزیراعظم سے بات کریں گے اور اس سے ہمارا اتحاد متاثر نہیں ہوگا۔ شہر میں اسٹریٹ کرائمز کی بڑھتی وارداتوں پر گورنر سندھ نے کہاکہ ہم نے کراچی میں بوری بند لاشوں کا دور بھی دیکھا ہے، کراچی میں اسٹریٹ کرائم ایک مرتبہ پھر بڑھ گیا ہے لیکن آئی جی سندھ اور ایڈیشنل آئی جی کراچی اسٹریٹ کرائم کم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، ہم ہر گلی کے کونے پر پولیس اہلکار کو تعینات نہیں کرسکتے۔گورنرسندھ نے کہا کہ جو بھی کراچی میں کچرے کی بات کرتا ہے ہم ان کے ساتھ ہیں، سندھ سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ مکمل طور پر ناکام ہوا ہے، کچرا اٹھانا کے ایم سی کا کام ہے اسے کرنے دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ مئیر کی ذمہ داری شہر کی صفائی اورکچرا اٹھانا ہے اس ضمن میں میئر کو اس کے اختیارات دیئے جائیں۔

مزید : صفحہ اول


loading...