پولیس کارویہ یہی رہاتوروزانہ آئی جی کوطلب کریں گے،ڈی آئی جی بھی ناقص تفتیش پراپنے آپ کوفارغ سمجھیں،ہائیکورٹ کے کیس میں ریمارکس

پولیس کارویہ یہی رہاتوروزانہ آئی جی کوطلب کریں گے،ڈی آئی جی بھی ناقص تفتیش ...
پولیس کارویہ یہی رہاتوروزانہ آئی جی کوطلب کریں گے،ڈی آئی جی بھی ناقص تفتیش پراپنے آپ کوفارغ سمجھیں،ہائیکورٹ کے کیس میں ریمارکس

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)مقدمے میں قتل کی دفعات شامل کرنے کیخلاف کیس میں عدالت سی سی پی او،ڈی آئی جی انویسٹی گیشن پر برہم ہو گئی،عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پولیس کارویہ یہی رہاتوروزانہ آئی جی کوطلب کریں گے،غفلت پرتفتیشی افسران اور آئی جی پنجاب کوفارغ کردیناچاہئے،ڈی آئی جی بھی ناقص تفتیش پراپنے آپ کوفارغ سمجھیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں مقدمے میں قتل کی دفعات شامل کرنے کیخلاف کیس کی سماعت ہوئی، جسٹس قاسم خان کے حکم پرسی سی پی او عدالت پیش ہوئے،عدالت سی سی پی اواورڈی آئی جی انویسٹی گیشن پربرہم ہو گئی،جسٹس قاسم خان نے استفسار کیا کہ پنجاب پولیس کیا کررہی ہے؟عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پولیس کارویہ یہی رہاتوروزانہ آئی جی کوطلب کریں گے،غفلت پرتفتیشی افسران،آئی جی پنجاب کوفارغ کردیناچاہئے،عدالت نے کہا کہ ڈی آئی جی بھی ناقص تفتیش پراپنے آپ کوفارغ سمجھیں۔

مزید : قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور