حتمی معاہدے میں بھارتی مطالبات تسلیم ، پاکستان نے کرتارپور راہدار ی کا مسودہ بھارت کے حوالے کردیا ، یومیہ 5ہزار سکھ یاتری آسکیں گے

حتمی معاہدے میں بھارتی مطالبات تسلیم ، پاکستان نے کرتارپور راہدار ی کا مسودہ ...
حتمی معاہدے میں بھارتی مطالبات تسلیم ، پاکستان نے کرتارپور راہدار ی کا مسودہ بھارت کے حوالے کردیا ، یومیہ 5ہزار سکھ یاتری آسکیں گے

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان نے کرتار پور رہداری کا مسودہ بھارت بھجوادیا ، روزانہ 5ہزار سکھ یاتری پاکستان آ سکیں گے ،حتمی معاہدے میں بھارتی مطالبا ت تسلیم کرلئے گئے ہیں۔

نجی نیوز چینل کے مطابق پاکستان نے کرتار پور راہدار ی پر دوطرفہ معاہدے کا مسود ہ بھارت کوبھجوا دیا ہے ، مسودے کے مطابق 5ہزار سکھ یاتری روزانہ پاکستان آئیں گے اور گنجائش کی صورت میں تعداد پر کوئی پابندی نہیں ہوگی ۔معاہدے پر دستخط کی تقریب واہگہ بارڈریاکرتارپور زیروپوائنٹ کے مقام پرہوگی ۔معاہدے پردوطرفہ اتفاق رائے کی صورت میں معاہدے کی وفاقی کابینہ سے منظوری لی جائےگی۔بھارت کی طرف سے مسودے کی منظوری کے بعدمعاہدے پردستخط لازم ہیں۔

مسودے کے مطابق یاتریوں کی آمد سے4روزپہلے فہرست کو حتمی شکل دی جائے گی اور پاکستانی حکام اس فہرست کی تصدیق کریں گے۔ کرتارپورکوریڈورکے ذریعے باباگرونانک سے عقیدت رکھنے والاکوئی بھی شخص آسکتاہے،پاکستان نے ہریاتری کے لیے 20ڈالر فیس برقراررکھی ہے،حتمی معاہدے میں بھارتی مطالبات تسلیم کرلئے گئے ہیں۔دوطرفہ معاہدے کا حتمی مسودہ جمعہ کی شام بھارتی ہائی کمیشن پہنچایا گیا۔

مزید : اہم خبریں /قومی