کب وہ مجھ تک کھلے میں آ  تاہے|ممتاز اطہر |

کب وہ مجھ تک کھلے میں آ  تاہے|ممتاز اطہر |
کب وہ مجھ تک کھلے میں آ  تاہے|ممتاز اطہر |

  

کب وہ مجھ تک کھلے میں آ  تاہے

خواب سا ، جاگتے میں آ  تاہے

اس کو تصویر کر رہا ہوں میں

جوبھی کچھ دیکھنے میں آ  تاہے

اس پہ دروازے جیسا کھلتا ہوں

جو مرے راستے میں آ  تاہے

دل تو ہے  دشتِ بیکراں جیسا

دل کہاں داٸرے میں آ  تاہے

مجھ کو اطہر یہ سب سخن کرنا

اک دعا کے صلے میں آ  تاہے

شاعر: ممتاز اطہر

(ممتاز اطہر کی وال سے)

Kab   Wo   Mujh   Tak   Khulay   Men   Aata   Hay

Khaab   Sa  ,   Jaagtay   Men   Aata   Hay

 Uss   Ko   Tasveer   Kar   Raha   Hun   Main

Jo   Bhi   Kuchh   Dekhnay    Men   Aata   Hay 

 Uss   Pe   Darwaazay   Jaisa   Khulta   Hun

Jo   Miray   Raastay   Men   Aata   Hay

Dil   To   Hay   Dasht-e-Bekaraan   Jaisa

Dil   Kahan    Daairay   Men   Aata   Hay

 Mujh   Ko   ATHAR   Yeh   Sab   Sukhan   Karna 

Ik   Dua   K   Silay   Men   Aata   Hay

 Poet: Mumtaz   Athar

 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -