جدید پولیسنگ، تھانہ کلچر کی تبدیلی میں سپروائزی افسران کاکردار کلیدی: آئی جی پنجاب 

جدید پولیسنگ، تھانہ کلچر کی تبدیلی میں سپروائزی افسران کاکردار کلیدی: آئی ...

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب راؤسردار علی خان نے کہاہے کہ شہریوں کے حقوق کے تحفظ اور پبلک سروس ڈلیوری کو بہتر بنانے میں سپروائزری افسران بالخصوص سرکل افسران کی کارکردگی کو بہتر سے بہتر بنانا وقت کی اہم ضرورت ہے جس کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کاسلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ جدید پولیسنگ اورتھانہ کلچر کی تبدیلی میں سپروائزری افسران کا کردار کلیدی حیثیت کا حامل ہے لہذا پولیس افسران خدمت خلق اورعوامی تحفظ کے جذبے کو شعار بناتے ہوئے نہ صرف مظلوم و مستحق شہریوں کے دست و بازو بنیں بلکہ ماتحت سٹاف سے بہتر پرفارمنس لے کر عوام تک انصاف کی باآسانی فراہمی یقینی بنائیں۔انہوں نے مزیدکہاکہ کیرئیر کے آغاز میں مشکل جگہوں پر پوسٹنگ کو ترجیح دیتے ہوئے یہ سوچ کر فیلڈ میں جائیں کہ ہمیں کچھ پتا نہیں کیونکہ یہی سوچ آپ کو سکھاتی اور آگے بڑھاتی ہے جبکہ پبلک سروس ڈلیوری کی مزید آسان فراہمی کو یقینی بناکر پولیس اور عوام کے درمیان روابط کو بہتر سے بہتر بنائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گز شتہ روز سنٹرل پولیس آفس میں صوبے کے مختلف اضلاع میں پریکٹیکل تربیت مکمل کرنے والے انڈر ٹریننگ اے ایس پیز کے آٹھ رکنی وفد کے ساتھ ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز شہزادہ سلطان نے آئی جی پنجاب کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ زیر تربیت افسران میں عبداللہ احسان نے حافظ آباد،اویس علی خان نے شیخوپورہ،خرم مہیسر نے بہاولپور،انعم تجمل نے گجرات،رحمت اللہ نے اوکاڑہ،کائنات اظہر خان نے قصور،اختر نواز نے نارووال اورشہزاد اکبر نے رحیم یار خان میں اپنی فیلڈ اٹیچ منٹ مکمل کی ہے جس دوران انہیں گراس روٹ لیول پر تھانہ ورکنگ سے لے کر سپروائزری لیول تک تمام امور کی عملی تربیت فراہم کی گئی ہے۔ اس موقع پر ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز شہزادہ سلطان، ڈی آئی جی آپریشنز ساجد کیانی اور اے آئی جی ٹریننگ علی ناصر رضوی سمیت دیگر افسران بھی موجودتھے۔

آئی جی پنجاب

مزید :

صفحہ آخر -