مشرف دور میں (ن) لیگ نہیں چھوڑی تو اب کیوں چھوڑونگا،زعیم قادری

مشرف دور میں (ن) لیگ نہیں چھوڑی تو اب کیوں چھوڑونگا،زعیم قادری

  

لاہور(شہزادملک) مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما سید زعیم حسین قادری نے حکمران جماعت تحریک انصاف میں شامل ہونے کی خبروں پر اپنے سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاحول ولاقوۃ الا بااللہ۔ ایسی خبروں پر اس سے زیادہ بہترین جملہ کوئی اور نہیں بنتا ہے اس لئے آپ بس یہی میری طرف سے لکھ دیں۔ ”روز نامہ پاکستان“ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے سید زعیم حسین قادری کا کہنا تھا کہ میں نے تواس وقت بھی پی ٹی آئی کا ٹکٹ نہیں لیا تھا جبکہ عام الیکشن کے وقت سب کو اس بات کا علم تھا کہ لانے والے ا سی جماعت کو ہی حکومت میں لا رہے ہیں اور اس جماعت کی ہی حکومت بھی ملک بھر میں بننے جارہی ہے اور یہ بات بھی ریکارڈ پر ہے کہ پی ٹی آئی نے تو میرا ٹکٹ اناؤنس بھی کردیا تھا لیکن یہ بات بھی میڈیا کے ریکارڈ پر ہے کہ میں نے اس وقت بھی پی ٹی آئی کا ٹکٹ لینے کی بجائے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑا تھا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ کیا میرا دماغ خراب ہے کہ جب ان کی حکومت آ رہی تھی تو تب ان کی جماعت میں نہیں گیا اور اب جب اس جماعت کی حکومت نے اس ملک کا معاشی طور پر بیڑہ غرق کردیا ہے اور اس ملک کو بد حالی میں مکمل طور پر دفن کرکے رکھ دیا ہے تو میں اس جماعت میں شامل ہو جاؤں پی ٹی آئی میں شامل ہونے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ان کا کہنا تھا کہ سیاست میں اصول بدلے نہیں جاتے یہ بھی سیاست کا ایک اہم حصہ ہوتا ہے کہ آپ نے اپنے اصولوں پر ہر حال اور ہر قیمت پر قائم رہنا ہوتا ہے ہم نے سابق صدر پرویز مشرف کے بدترین ڈکٹیٹر شپ کے دور میں مسلم لیگ کو نہیں چھوڑا تو اب کیوں چھوڑوں گا سیاسی مخالفین جتنی مرضی سوشل میڈیا یا پھر ادھر، ادھر افواہیں پھیلاتے رہیں۔میں مسلم لیگ کے ساتھ کھڑا تھا، مسلم لیگ کے ساتھ کھڑا ہوں اور مسلم لیگ کے ساتھ ہی کھڑا رہوں گا۔ 

زعیم قادری

مزید :

صفحہ آخر -