آٹا ڈیلرز ایپ کا اجراء جلد کیا جائے گا جن کا استعمال ڈیلرز پر لازمی ہوگا

    آٹا ڈیلرز ایپ کا اجراء جلد کیا جائے گا جن کا استعمال ڈیلرز پر لازمی ہوگا

  

         پشاور (سٹاف رپورٹر) خیبرپختونخوا کے وزیر برائے محکمہ خوراک اور سائنس وانفارمیشن ٹیکنالوجی عاطف خان نے کہا ہے کہ پورے صوبے میں محکمہ خوراک شہریوں کو رعایتی نرخوں پر ملنے والے سرکاری آٹے کی شفاف تقسیم کے لئے ایپ تیار کرلیا جن کا اجراء بہت جلد کیا جائیگا،ان کا کہنا تھا کہ ایپ کااستعمال تمام آٹا ڈیلرز پر لازم ہوگا اور ڈیلرز شہریوں کو آٹا  فراہم کرتے وقت ایپ میں ان کے کوائف درج کرائینگے، تاکہ کسی کی حق تلفی نہ ہوسکے اور ذیادہ سے ذیادہ لوگ رعایتی نرخوں پر آٹا خرید سکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے محکمہ خوراک میں آٹا ڈیلرز ایپ سے متعلق منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ وزیر خوراک کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت کا مشن صوبے کے اداروں میں ریفارمز سے بہتری لانا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نئے نظام سے رعایتی نرخوں پر ملنے والے آٹے سے متعلق شکایات کا ازالہ ہوسکے گا۔ وزیر خوراک کو اجلاس میں بتایا گیا کہ ایپ کی مدد سے محکمہ خوراک کو متعلقہ ڈی ایف سی،ڈیلرز سے متعلق ڈیٹا حاصل ہوسکے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ آٹا ڈیلرز ایپ نہ ہونے کی صورت میں آٹے کا کوٹہ فراہم نہیں کیا جائیگا۔ حکام کا کہنا تھا کہ ایپ کا آغاز ابتدائی طور پر تین اضلاع مردان، نوشہرہ اور ایبٹ آباد سے کیا جارہا ہے۔ جہاں ہر گھرانے کو پانچ دنوں میں ایک بار 20 کلو آٹا رعایتی نرخ پر فراہم کیا جائیگا۔ نئے نظام میں ایک بندہ پانچ دنوں کے دوران دوبارہ رعایتی نرخ پر آٹا حاصل نہیں کرسکے گا۔ حکام کا بریفنگ میں کہنا تھا کہ اس نئے نظام سے آٹے کی تقسیم کے نظام میں شفافیت لائی جاسکے گی۔ صوبائی وزیر کو فوڈ سیفٹی اتھارٹی کے حکام نے موبائل فوڈ ٹیسٹنگ لیبارٹریز کے حوالے سے اب تک کی جانے والی پیش رفت سے بھی آگاہ کیا۔ وزیر خوراک کو بتایا گیا کہ فوڈ سیفٹی اتھارٹی دسمبر تک فوڈ سیفٹی لیبز پر کام مکمل کرلیں گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -