18 سالہ لڑکی کو گوجرہ موٹروے پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا ، ملزمان فیصل انٹر چینج پر پھینک کر فرار 

18 سالہ لڑکی کو گوجرہ موٹروے پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا ، ملزمان ...
18 سالہ لڑکی کو گوجرہ موٹروے پر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا ، ملزمان فیصل انٹر چینج پر پھینک کر فرار 

  

گوجرہ(ڈیلی پاکستان آن لائن )گوجرہ موٹروے پر 18 سالہ لڑکی کو نوکری کا جھانسہ دے کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ملزمان کی فوری گرفتاری کی ہدایت جاری کر دی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق پولیس کا کہنا ہے ملزمان نے ٹوبہ ٹیک سنگھ کی لڑکی کو بوتیک پر نوکری کا جھانسہ دے کر گوجرہ بلایا، موٹر وے پر کار میں زیادتی کا نشانہ بنایا اور لڑکی کو فیصل آباد انٹر چینج پر پھینک کر فرار ہوگئے۔ ایف آئی آر میں متاثرہ لڑکی کی پھوپھی نے بتایا کہ ا±س کی 18 سالہ بھتیجی کے موبائل فون پر میسج آیا کہ گوجرہ میں انٹرویو ہے، وہاں پہنچے تو ملزمان نے لڑکی کو گاڑی میں بٹھایا اور ساتھ لے جا کر موٹر وے پر زیادتی کا نشانہ بنایا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کروا لیاگیا ہے اور اب ڈی این اے کروایا جا رہا ہے جبکہ ملزمان کی گرفتاری کے لیے بھی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے نوٹس لیتے ہوئے فوری ملزمان کی گرفتاری کا حکم دیاہے ، ان کا کہناتھا کہ ملزمان کو قانون کی گرفت میں لا کر قانون کے مطابق کارروائی کی جائے ، متاثرہ لڑکی کو انصاف کی فراہمی کے تمام تقاضے پورے کئے جائیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -فیصل آباد -