برطانوی خاتون میئر کا کونسل کے اجلاس میں ہراساں کیے جانے کا انکشاف

برطانوی خاتون میئر کا کونسل کے اجلاس میں ہراساں کیے جانے کا انکشاف
برطانوی خاتون میئر کا کونسل کے اجلاس میں ہراساں کیے جانے کا انکشاف

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانوی شہر بیورلے کی خاتون میئر لنڈا جانسن نے کونسل کے اجلاس میں خود کو ہراساں کیے جانے کا انکشاف کرتے ہوئے پولیس کے روئیے کے متعلق ایسی بات کہہ دی کہ اراکین سن کر دنگ رہ گئے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق لنڈا جانسن نے بتایا کہ 1970ءکی دہائی میں جب وہ نوعمر تھی، اسے سڑک پر جاتے ہوئے ایک ملزم نے جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا تھا ۔ اس وقت لنڈا نے منی سکرٹ پہن رکھی تھی۔

65سالہ لنڈا بتاتی ہے کہ ”اس واقعے کے بعد میں پولیس کے پاس گئی اور انہیں جنسی ہراسگی کے اس واقعے کے متعلق بتایا جس پر آفیسرز نے مجھے کہا کہ ’جنسی ہراسگی سے بچنے کے لیے تم لمبی سکرٹ پہن کر باہر نکلا کرو۔‘میں توقع کرتی ہوں کہ ہمارا معاشرہ عورت بیزاری کے اس دور سے باہر نکل آیا ہے، جب الٹا ہراسگی کا نشانہ بننے والی خاتون ہی کو موردالزام ٹھہرا دیا جاتا تھا۔ اس وقت میں عمر کی 20کی دہائی میں تھی اور مجھ پر ایک بڑی عمر کے مرد نے جنسی حملہ کیا تھا۔پولیس کی طرف سے یہ جواب سن کر مجھ میں اتنی ہمت بھی باقی نہیں رہی تھی کہ گھر جا کر اپنے والدین کو ہی اس واقعے کے متعلق بتا پاتی۔“

مزید :

برطانیہ -