صاف پانی کی فراہمی کے منصوبہ کی مد میں اربوں کے نقصان کا خدشہ ہے،مراد راس

صاف پانی کی فراہمی کے منصوبہ کی مد میں اربوں کے نقصان کا خدشہ ہے،مراد راس

  

لاہور(پ ر) تحریک انصاف کے رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹر مراد راس نے ایک تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع کروا دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ نجی اخبار کی خبر کے مطابق سیاسی مداخلت کے باعث حکومت پنجاب کی جانب سے صاف پانی کی فراہمی کا منصوبہ کی مد میں محکمہ خزانہ پنجاب کو اربوں روپے کا نقصان کا اندیشہ ہے اس منصوبے کے تحت جن دیہاتی علاقوں میں میٹھے پانی کی قلت ہے یا جہاں پینے کا صاف پانی دستیاب نہیں وہاں صاف اور میتھے پانی کی ایک ٹینکی تعمیر کر کے عوام کو فراہمی یقینی بنائی جا سکے لیکن اراکین اسمبلی آئندہ انتخاب میں اپنی کارکردگی دکھانے کے لئے ایسے علاقوں میں ٹینکیاں تعمیر کر رہے ہیں جہاں اس کی ضرورت نہیں۔ اعدادو شمار کے مطابق ایک قومی اسمبلی کے حلقے کے لئے فی رکن اسمبلی صاف پانی کی فراہمی کی مد میں 18کروڑ کی خطیر رقم مہیا کی گء ہے جو غلط جگہوں اور من پسند ٹھیکیداروں کو نوازنے کے استعم ہو رہی ہے خطیر رقم میں کروڑوں روپے کی مبینہ گھپلوں کے باعث محکمہ خزانہ پنجاب اور قومی خزانہ کو اربوں روپے کا ٹیکا لگایا جا رہا ہے۔ دوسری طرف اکثر دیہاتوں میں پائپ لائن بچھانے کے لئے کھودی گئی گلیاں بھی پر نہیں کی گئیں جس کے باعث لوگوں کو مزید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -