آخری صہیونی کے فلسطین سے نکالے جانے تک جہاد جاری رہے گا، حماس

آخری صہیونی کے فلسطین سے نکالے جانے تک جہاد جاری رہے گا، حماس

  

غزہ (این این آئی) حماس نے پورے فلسطین کو غاصب صہیونیوں کے پنجہ استبداد سے آزاد کرنے کیلئے مسلح جہاد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ فلسطین پر قابض آخری صہیونی کے نکالے جانے تک مسلح مزاحمت جاری رہے گی۔حماس کی جانب سے غزہ کی پٹی سے صہیونی فوج کے انخلاء کی سالگرہ کی مناسبت سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ مسلح مزاحمت وطن عزیز کی آزادی اور قوم کو صہیونیوں کے پنجوں سے آزاد کرانے کا واحد راستہ ہے۔ حماس نام نہاد مذاکرات کے ڈھونگ کی حمایت کریگی نہ ہی بے مقصد مذاکرات کا حصہ بنے گی۔ حماس نے اپنے ملک پر ناجائز قبضہ کرنیوالے غاصب ٹولے کیخلاف بندوق اٹھائی ہے۔ جب تک آخری صہیونی فلسطین سے نکل نہیں جاتا اس وقت تک بندوق نہیں چھوڑیں گے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ غزہ کی پٹی سے صہیونی فوج کا انخلا اور یہودی بستیاں صہیونی ریاست کی منشاء کے تحت ختم نہیں کی گئیں بلکہ فلسطینی قوم کی مسلح مزاحمت کے نتیجے میں دشمن غزہ کی پٹی کو خالی کرنے پر مجبور ہوا ہے۔حماس نے غزہ کی پٹی سے صہیونیوں کے انخلاء کو فتح عظیم قرار دیتے ہوئے کہا کہ فلسطینی قوم اسی طرح مسلح جدو جہد جاری رہے گی یہاں تک کہ فلسطین پر قابض آخری صہیونی بھی یہاں سے نکل جائے۔بیان میں کہا گیا ہے کہ ملک پر ناجائز قابض دشمن کے ساتھ بات چیت نہ صرف وقت کاضیاع فلسطینی قوم کے بنیادی حقوق کے ساتھ دھوکا ہوگا۔

مزید :

عالمی منظر -