عدالتوں کا کام نہ کرنیکا تاثر غلط، فیصلے میرٹ پر ہورہے ہیں، نثار رانا

عدالتوں کا کام نہ کرنیکا تاثر غلط، فیصلے میرٹ پر ہورہے ہیں، نثار رانا

  

وہاڑی (بیورو رپورٹ+نا مہ نگار)ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نثار احمد رانا نے کہا ہے کہ عوام کو باخبر رکھنے کیلئے میڈیا اہم کردار ادا کر رہا ہے چیف جسٹس سید منصور علی شاہ کے ویژن کے مطابق کورٹس میں ہونے والی نئی اصطلاحات کے بارے میں عوام کو باخبر رکھنا نہایت ضروری ہے عدالتیں اپنا کام احسن طریقے سے سر انجام دے رہی ہیں عدالتوں کا کام نہ کرنے کا تاثرسراسر غلط ہے کچھ کیسز میں تا(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

خیر ہو جاتی ہے وہاڑی میں ماڈل کورٹس ہونے کی وجہ سے کیسزکو بہتر اندازسے ہینڈل کیا جاتا ہے کورٹس میں میرٹ پر فیصلے کئے جارہے ہیں پنجاب بھر میں ایک طرح کی ماڈل عدالتیں قائم کی جارہی ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ کے کانفرنس ہال میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا اس موقعہ پر سابق صدر وہاڑی پریس کلب نو ید اقبال قریشی ، صدر الیکٹر انک میڈیا رپورٹر ایسو سی ایشن وحید احمد بھٹی ، جنرل سیکرٹری شاہد پرویز چودھری ، سینئر صحافی حاجی رفیق رانا ، انوار آفتاب ، محمد یوسف بھٹی ، علی وارث کلیم ، عمران حفیظ، کا شف منور قریشی ، رانا عبدالعزیز ، میاں ساجد منظور ، چودھری عباس ببا، عمران گوہر ،عبدالطیف ، ندیم شہزاد ، طارق سعید ، ایشلے، شفقت یعقوب ودیگر موجود تھے ا۔نہوں نے کہا کہ وکلاء اور بنچ کا چولی دامن کا ساتھ ہے وکلاء ہمارا حصہ ہیں بار اور بنچ دونوں کو ساتھ مل کر چلنا ہے انہوں نے کہا کہ ضلع بھر کی عدالتوں میں ججز کو ان کی صلاحیتوں اور کیسز کی نوعیت کے حساب سے کورٹس فراہم کر دئیے گئے ہیں اب فوجداری مقدمات والے ججزسول والے مقدمات اور سول والے فوجداری مقدمات نہیں نپٹائیں گے انہوں نے کہاکہ فوجداری اور سول محکمہ جات کیلئے الگ الگ عدالتیں قائم کر دی گئی ہیں عدالتیں الگ الگ ہونے سے کا م احسن طریقے سے نپٹایا جائے گا عدالتوں میں کیسز مکمل کرنے کیلئے ٹائم فریم دیا جائے گا وہاڑی میلسی اور بوریوالا میں ججز کے تمام کورٹس کو نمبرز بھی الاٹ کردئیے گئے ہیں کورٹ نمبر 1میں سیشن جج مقدمات کوسنیں گے کورٹس کے نمبرز الاٹ ہونے سے سائلین کو اپنی متعلقہ عدالت تک پہنچنے میں آسانی ہوگی، بہت جلد کنزیومر کورٹس کا آغاز بھی کر دیا جائے گا انہوں نے کہا کہ کورٹس کے ججز اور عملہ کے یونیفارم پہننے سے ڈسپلن کا عنصر سامنے آیا ہے عام آدمی کو چپراسی،اہلمد،ڈرائیورز اور کلرکس کو پہچاننے میں آسانی ہوئی ہے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -