کنواں کھودتے، کرنٹ لگنے سے مزدور، زہریلی چیز کھانے سے بچی جاں بحق

کنواں کھودتے، کرنٹ لگنے سے مزدور، زہریلی چیز کھانے سے بچی جاں بحق

  

ملتان، کبیر والہ، خانیوال، گڑھا موڑ، ٹبہ سلطان پور، میلسی ، کوٹ ادو، شاہ جمال، چشتیاں، بھکر (سٹاف رپورٹر، نمائندگان) ٹریفک حادثات میں بچے سمیت 5افراد جان کی بازی ہار گئے، کنواں کھدتے مزدور ریت تلے دب گیا، بچی نے زہریلی شے نگل لی، مزدور کو کرنٹ لگ گیا، شادی شدہ خاتون کالا پتھر پینے سے ہلاک ملتان سے سٹاف رپورٹر کے مطابق میپکو ایس ایس اینڈ ٹی کوٹ ادو کے اسسٹنٹ انجینئر شیخ فضل الحق ٹریفک حادثہ میں چل بسے۔ وہ 132 کے وی گرڈ اسٹیشن شادن لُنڈ میں ہونے والی فنی خرابی دور کرنے کے سلسلہ میں رات تقریباً گیارہ بجے مظفر گڑھ سے روانہ ہوئے۔ محمود کوٹ کے قریب ان کی گاڑی کو ٹریکٹر ٹرالی نے ٹکر ماردی جس سے وہ موقع پر جاں بحق ہوگئے۔کبیر والہ سے تحصیل رپورٹر کے مطابق(بقیہ نمبر38صفحہ7پر )

موضع موہری پور کے علاقہ چاہ شاہ محمد والا میں ریت کے کنوئیں سے ریت نکالنے کے دوران مٹی کاتودہ گرنے سے 45سالہ مزدور اکبر علی جان بحق ہوگیا ہے ۔ریسکیو1122نے جب مذکورہ مزدور کو امدادی کارروائی کرکے باہر نکالا تو وہ دم توڑ چکا تھا۔مرحوم کی عمر 45سال کے قریب تھی ۔ خانیوال سے بیورو نیوز کے مطابق فرخ کالونی راجبا سے 30سالہ نامعلوم شخص کی لاش برآمد ریسکیو 1122 نے لاش نکال کر متعلقہ پولیس کے حوالے کر دی۔ گڑھا موڑ ، ٹبہ سلطان پور سے نامہ نگار کے مطابق موضع سحرٹبہ سلطان محمد صادق اپنے رشتہ دار الیاس اور فوزیہ کے ہمراہ شادی کی تقریب میں جا رہے تھے گورنمنٹ کالج وومین ٹبہ سلطان پور کے قریب نامعلوم کا ر نے موٹر سائیکل کو ٹکر ما ر کر فرار ہونے میں کامیاب ہو گئی ۔زخمیوں کو آ ر ایچ سی ٹبہ سلطان پور میں لایا گیا محمد صادق موقع پر جاں بحق ۔تھانہ ٹبہ سلطان پور کی پولیس موقع پر پہنچ گئی اور میاں بیوی الیاس اور فوزیہ تشویش ناک حالت میں نشتر ہسپتال ملتان میں ریفر کر دیا گیا۔ میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق نواحی قصبہ کوٹ مظفر کے رہائشی محمد اعجاز کی 4 سالہ بیٹی اریبہ گھر میں موجود تھی کہ اسی دوران کوئی زہریلی چیز کھانے سے اسکی حالت غیر ہو گئی جسے فوری طور پر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میلسی لایا گیا جہاں طبی امداد کے دوران بچی چل بسی۔ کوٹ ادو سے تحصیل رپورٹر کے مطابق کوٹ ادو کے نواحی قصبہ چوک سرور شہید کے علاقہ اڈا ریاض آباد کے قریب رات آڑھائی بجے ڈرائیور کو نیند آنے پر کار نمبری 221اے اے بی جس میں ڈرائیور ملتان کا رہائشی محمد زبیراپنے رشتہ داروں عبدالمالک اور اس کی بیوی سحرش سوار تھے سامنے سے آنیوالی ٹریکٹر ٹرالی سے ٹکرا گئے، جس کے نتیجہ میں کار ڈرائیور محمد زبیر موقع پر جاں بحق جبکہ عبدالمالک اور اس کی بیوی سحرش شدید زخمی ہو گئے ، جنہیں فوری طبعی امداد کے بعد نشتر ہسپتال ملتان بھیج دیا گیا جب کہ ٹریکٹر ٹرالی نامعلوم ڈرائیور ٹریکٹر چھوڑ کر موقع سے فرار ہو گیا۔ جبکہ بھکر کا رہائشی بشیر احمد ملک تیلی جسکی شادی وحید بریانی والے کی ہمشیرہ سے ہوئی تھی جو کہ اپنے سسرال محلہ غریب آباد میں کرایہ کے مکان میں رہائش پذیر تھا اور سفیدی کا کام کرکے اپنے بچوں کا پیٹ پالتا تھا،گزشتہ روز وہ پل بلوچاں کے قریب نادر پٹھان کے گھر سفیدی کر رہاتھا کہ دوران سفیدی چھت کے اوپر سے گزرنے والی الیون کے وی سے ٹکرا گیا جس کے نتیجہ میں اس کا تمام جسم جھلس گیا جسے تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کوٹ ادو لایا گیا تا ہم وہ جانبر نہ ہو سکا اور جاں بحق ہو گیا،مرحوم کی عمر35سال اور وہ 4بچوں کا باپ تھا۔ شاہ جمال سے نمائندہ پاکستان کے مطابق بستی کلر والاموضع محمد پرہاڑ کی رہائشی نسرین زوجہ خادم نے گھریلو جھگڑے کے بعد کالا پتھر پی کر زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے ماطبق چک 40فتح کے قریب ایک تیز رفتار کار کی ٹکر سے دوسری جماعت کا طالب علم جاں بحق ہو گیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ متوفی محمد رمضان سکول سے چھٹی کے بعد گھر جا رہا تھا کہ تیز رفتار آنے والی کار نے اسے ٹکر دے ماری جس کے نتیجہ میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گیا ۔ جبکہ ڈرائیور گاڑی چھوڑکر موقع سے فرار ہو گیا ۔ پولیس نے ملزم کی گاڑی کو قبضہ میں لے کر مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ۔ بھکر سے نامہ نگار کے مطابق جنڈانوالہ میں خاتون کی چادر موٹر سائیکل میں پھنسنے سے حادثے میں چھ ماہ کا بچہ جاں بحق جبکہ میاں بیو ی شدید زخمی ہو گئے واقعات کے مطابق جنڈانوالہ کے محلہ شاہین آباد کے رہائشی رانا وہاب سندھی اپنی بیوی اور چھ ماہ کے بیٹے کے ہمراہ اپنے رشتے داروں کو ملنے کلورکوٹ جا رہے تھے کہ راستے میں کلورکوٹ جنڈانوالہ روڈ پر ان کی بیوی کی چادر موٹر سائیکل میں پھنس گئی جس سے موٹر سائیکل روڈ پر جا گری جس سے چھ ماہ کاان کا بیٹا موقع پر جاں بحق ہو گیا جبکہ وہاب اور ان کی بیوی شدید زخمی ہو گئے حادثے کی خبر سن کر گھرانے میں کہرام مچ گیا۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -