آزادکشمیر میں17سال سے پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ،ڈاکٹر بشیر

آزادکشمیر میں17سال سے پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ،ڈاکٹر بشیر

  

مظفرآباد (بیورورپورٹ)آزادکشمیر میں گزشتہ سترہ سال سے پولیو کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ۔اسمیں محکمہ صحت عامہ کے ملازمین ،سول سوسائٹی ،میڈیا ،علمائے کرام ،اساتذہ اور دیگر ادارہ جات کا تعاون حاصل رہا ہے ۔تین روزہ پولیو مہم 18ستمبر سے شروع ہو رہی ہے ۔جس کیلئے انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں ۔آزادکشمیر بھر میں پانچ سال سے کم عمر کے 748988بچوں کو محکمہ صحت عامہ کی ٹیمیں گھر گھر جا کر پولیو کے قطرے پلائیں گی ۔اس سلسلہ میں جملہ انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی ہے جس کے تحت 2103موبائل ٹیمیں 140ٹرانزٹ پوائنٹس اور 410فکس سنٹرز قائم کر دئیے گئے ہیں ۔اس ساری مہم کی مانیٹرنگ کیلئے بھی موثر نظام تشکیل دیا جا چکا ہے ۔جہاں 525ایریا انچارج 204زونل سپروائزر ،ضلعی و مرکزی سطح پر ٹیموں کو سپورٹ کرینگے اور جہاں کمی کوتاہی ہو اس پر قابو پانے میں معاونت کرینگے تاکہ پانچ سال سے کم عمر کوئی بچہ پولیو کے قطروں سے محروم نہ رہ جائے ۔اس موقع پر ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹر محمد بشیر چوہدری نے والدین سے اپیل کی ہے کہ پانچ سال سے کم عمر کے تمام بچوں کو پولیو کے قطرے پلائے جانے کو یقینی بنائیں تاکہ اس مہلک بیماری سے چھٹکارا حاصل کیا جا سکے ۔انہوں نے کہا کہ ضلعی سطح پر ڈپٹی کمشنر آفس اور ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفس میں پولیو کنٹرول روم قائم کر دئیے گئے ہیں پولیو مہم کے دوران اگر کسی گھر یامحلہ میں پولیو ٹیم نہ پہنچے تو متعلقہ ضلعی کنٹرول رول میں اس کی اطلاع دیں تاکہ ٹیم کو علاقہ میں بھیجا جا سکے ۔ڈائریکٹر جنرل ہیلتھ سروسز نے ملازمین محکمہ صحت عامہ کو ہدایت کی کہ وہ دل جمعی سے اپنے فرائض منصبی سرانجام دیں اور اس قومی فریضہ کی ادائیگی میں کوئی دقیقہ فروز گزاشت نہ کریں ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -