ہائیکورٹ نے تاجکستان میں پیدا ہونے والا ڈیڑھ سالہ بچہ ماں کے حوالے کردیا

ہائیکورٹ نے تاجکستان میں پیدا ہونے والا ڈیڑھ سالہ بچہ ماں کے حوالے کردیا
ہائیکورٹ نے تاجکستان میں پیدا ہونے والا ڈیڑھ سالہ بچہ ماں کے حوالے کردیا

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہورہائیکورٹ نے تاجکستان میں پیدا ہونے والے ڈیڑھ سالہ بچے محمد ہادی کواس کی ماںکے حوالے کرنے کا حکم دے دیا۔جسٹس سردار احمد نعیم نے باغبانپورہ کی رہائشی ماہم فیاض کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ خاوند نے بچہ چھین کر گھر سے نکال دیا ہے، ماں کو بچے سے ملنے بھی نہیں دیا جا رہا، انہوں نے استدعا کی کہ عدالت بچہ ماں کے حوالے کرنے کا حکم دے،درخواست گزار کے خاوند عمیرجلیل کی طرف سے بتایا گیا کہ دونوں کی شادی خاندان کی باہمی رضا مندی سے 9مارچ 2015 ءکو انجام پائی، شادی کے بعد روزگار کے لئے بیوی کو لے کر تاجکستان چلا گیا، وہاں پر بڑی مشکل سے اپنا ہوٹل کا کاروبار شروع کیا، اس دوران بیٹے محمد ہادی کی پیدائش ہوئی، انہوں نے کہا کہ بیوی ماہم سوا سال کے بیٹے کو پردیس میں چھوڑ کر پاکستان آگئی، مجھے بھی مجبوراً بچے کی پرورش کے لئے ہوٹل فروخت کرکے وطن واپس آنا پڑا، معلوم ہوا ہے کہ درخواست گزار نے عدالت سے رجوع کر کے خلع کی ڈگری لے لی ہے، میں اپنے بچے کے مستقبل کے لئے ماہم کے ساتھ اپنا گھر بسانا چاہتا ہوں، درخواست گزار کی جانب سے انکار کے بعد عدالت نے بچے کو ماں کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

مزید :

لاہور -