عمر کوٹ کے قدیمی مندر آکھاڑہ پر مقامی ہندو تاجر کا مبینہ طور پر قبضہ

عمر کوٹ کے قدیمی مندر آکھاڑہ پر مقامی ہندو تاجر کا مبینہ طور پر قبضہ
عمر کوٹ کے قدیمی مندر آکھاڑہ پر مقامی ہندو تاجر کا مبینہ طور پر قبضہ

  


عمرکوٹ(سید ریحان شبیر     ) عمرکوٹ کے قدیمی مندر آکھاڑہ  پر مقامی ہندو تاجر کی جانب سے مبینہ طور پر قبضے کی کوشش کی گئی مندر کے اندر موجود مورتیون کو مسمار کیا بااثر  قبضہ مافیہ کے خلاف عقیدتمندون کا احتجاج مظاہرہ واقعے    کا کوئی بھی مقدمہ درج نہ ہوسکا ۔

تفصیلات کےمطابق  عمرکوٹ کے قدیمی مندر آکھاڑہ کے پلاٹ پر مقامی ہندو تاجر کی جانب سے مبینہ  قبضے کے خلاف  مندر کے عقیدت مندوں اور شیوادھاری خاندان کی جانب سے عمرکوٹ پریس کلب کےسامنے  احتجاجی مظاہرہ کیا گیا آکھاڑا مندر سے عقیدت رکھنےوالے سندھ بھرکےمختلف شہروں عمرکوٹ،  تھرپارکر ،تلہار،بدین،ماتلی،جھڈو،نئوکوٹ، پنگریو و دیگر علاقوں سے آنےوالے مریدین  جس میں میر فتح رباری،چانڈو رباری،کرشن رباری،دھنو ،ویرو،کنڈو رباری و دیگر کا کہنا تھا کہ  تاریخی اہمیت کے حامل آکھاڑہ مڑی مندر  میں ہمارے مرشد مٹھو گر گوسوامی و دیگر کی سمادیوں (قبروں) کی بےحرمتی کی گئی ہے اور مندر کو نقصان پہنچایا گیا ۔

یہ انہوں نے کہا کہ مقامی پولیس ہم سے کوئی تعاون نہیں کررہی اور گزشتہ 48گھنٹوں سے سراپا احتجاج ہیں لیکن ملزم اتنا بااثر ہے کہ اس کےخلاف پولیس کیس لینےکو تیار نہیں انہوں نے الزام عائد کرتےہوئے کہا کہ مبینہ طور   مقامی تاجر رتن مالھی نے مندر کے پلاٹ پر قبضہ کر رکھا ہے اس نے اپنے ساتھیوں کے ہمراہ  اسلحہ کے زور پر قدیمی آکھاڑا مندر کا مین گیٹ توڑ کر  مزید اراضی پر قبضہ کرنا چاہتا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ رتن مالھی اور اس کے حامیوں نے گذشتہ رات مندر میں داخل ہو گر توڑ پھوڑ کی جس سے مندر میں رکھی مورتیوں کو بھی نقصان پہنچا ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ رتن مالھی کے خلاف کاروائی کر کے مندر کا پلاٹ خالی کروایا جائے اور واقعے کا کیس درج کیا جائے .

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ


loading...