ڈینگی اقدامات غیر موثر کیوں ثابت ہوئے؟ تمام سرگرمیوں کی کڑی نگرانی کا نظام لانے کا فیصلہ

ڈینگی اقدامات غیر موثر کیوں ثابت ہوئے؟ تمام سرگرمیوں کی کڑی نگرانی کا نظام ...
ڈینگی اقدامات غیر موثر کیوں ثابت ہوئے؟ تمام سرگرمیوں کی کڑی نگرانی کا نظام لانے کا فیصلہ

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ میں ڈینگی ریو اجلاس میں سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ نے ڈینگی کے حوالے سے تمام اقدامات اور سرگرمیوں کی گڑی نگرانی کا نظام لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے،ڈینگی مریضوں کی رپورٹنگ، پھیلاؤ کی روک تھام کے لیے اقدامات کی تھرڈ پارٹی اولیوشن کی جائے گی،اولیوشن موبائل فون اپلیکشن کے ذریعے کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ میں ڈینگی ریو اجلاس میں سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ نے متعلقہ افسران سے بات کرتے ہوئے ڈینگی اقدامات غیر موثر  ثابت ہونے کی وجوہات پر تفصیلی بات کی اوراس حوالے سے تمام سرگرمیوں کی کڑی نگرانی کا نظام لانے کے احکامات جاری کیے۔اس حوالے سے متعلقہ متعلقہ افسران کو فوری کام مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ڈینگی مریضوں کی رپورٹنگ اورپھیلاو کی روک تھام کے لیے اقدامات کی تھرڈ پارٹی اولیوشن کی جائے گی۔تھرڈ پارٹی اولیوشن موبائل فون اپلیکشن کے ذریعے کی جائے گی جوکہ تکمیل کے قریب ہے جسے جلد از جلد لانچ کرنے جا رہے ہیں۔سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ  کیپٹن (ر)  محمد عثمان کا کہنا تھا کہ ڈینگی کے پھیلاؤ کی بڑی وجوہات فرضی کاروائیاں اور ہسپتالوں کی غلط رپورٹنگ بنی ہیں۔ جس کی وجہ سے ڈینگی لاروا اور مرض کے پھیلاو پر بروقت قابو نہ پایا جا سکا۔کیپٹن (ر) محمد عثمان کا مزید کہناتھا کہ تھرڈ پارٹی اولیوشن سے ڈینگی کی خلاف فرضی رپورٹنگ، کاغذی کاروائیوں کا خاتمہ ہو سکے گا۔ تھرڈ پارٹی اولیوشن کا آغاز ڈینگی سے ذیادہ متاثر اضلاع راولپنڈی، فیصل آباد اور لاہور کے سرکاری و نجی سے کیا جائے گا۔ سیکرٹری پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کیپٹن(ر)محمد عثمان نے واضح کیا کہ وزیر اعلی پنجاب کی خصوصی ہدایت کے مطابق ڈینگی میں غفلت برتنے والوں کے خلاف سخت سے سخت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...