سرعام پھانسی درست نہیں، شہزاد رائے، عورتیں قبروں میں بھی محفوظ نہیں: عائشہ عمر 

      سرعام پھانسی درست نہیں، شہزاد رائے، عورتیں قبروں میں بھی محفوظ نہیں: ...

  

لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) معروف گلوکار و سماجی کارکن شہزاد رائے نے بد اخلاقی کیس میں میں ملوث ملزمان کی سرِعام پھانسی کی مخالفت کردی۔مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کر تے ہوئے شہزاد رائے نے لکھا میں نے بچوں کو جنسی استحصال سے بچانے کیلئے بہت کام کیا ہے اور میں چاہتا ہوں عورتوں اورچھوٹے بچوں کیساتھ بد اخلاقیکرنے والے وحشی درد ند و ں کو قانون کی پوری طاقت سے سزا دی جائے،شہزاد رائے نے سرِعام پھانسی کی مخالفت کرتے ہوئے لکھا میں بد اخلاقی کیسز میں ملوث ملزمان کو عوامی طور پر سرِعام پھانسی دینے کیخلاف ہوں۔کیا آپ چاہتے ہیں ہمارے چھوٹے بچے چوکوں، چوراہوں، سڑکوں اور بازاروں میں لٹکی لاشیں دیکھیں؟‘جو لوگ مجرمان کی سرِعام پھانسی کا مطالبہ کر رہے ہیں ان کو یہ نہیں بھولنا چاہیے تشدد ہی تشدد کو جنم دیتا ہے اور اِس پر ہمارے پاس بہت سی تحقیقاتی رپورٹس بھی موجود ہیں۔ وسیم اکرم کی اہلیہ و سماجی کارکن شنیرا اکرم نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا تھا زیادتی کے واقعات میں ملوث ملزمان کو سرِعام پھانسی دینا اِن سنگین مسائل سے چھٹکارا حاصل کرنے کا راستہ نہیں ہے۔ اگر ہم اپنے ملک میں ایک محفوظ اور مہذب معاشر ہ چاہتے ہیں تو ہمیں اِس تاریکی دور سے نکلنا ہوگا اور اِس کیلئے ہمیں بحیثیت قوم ایک ہوکر سخت محنت کرنے کی ضرورت ہے۔ اداکارہ و ماڈل مایا علی نے انسٹاگرام پر اپنے غصے کا اظہا ر کرتے ہوئے کہا ایک مرتبہ پھر ہم یہاں ہیں، ہمیں کیوں ایسے واقعات کیخلاف احتجاج کرنا پڑتا ہے؟ کیوں ہم محفوظ نہیں؟ کیوں بحیثیت خواتین ہمیں اپنے آپ کو محفوظ رکھنے کے لیے ڈرنا پڑتا ہے؟ کیوں کوئی قانون لاگو نہیں کیا گیا؟ ان معاملات کی مکمل تحقیقات کی ضرورت ہے تاکہ ہمیں ان واقعات کی بنیادی وجہ معلوم ہوسکے اور ہم دوبارہ اس مقام تک ایک ہی چیز کیلئے احتجاج کرنے نہ پہنچیں۔عائشہ عمر نے لاہور موٹروے پر خاتون کیساتھ اجتماعی بد اخلاقی کے واقعے پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے سوالیہ انداز میں لکھا کہ ’لاہور موٹروے واقعے پر مرد اتنے حیران کیوں ہیں؟‘اداکارہ نے مرد حضرات سے سوال کرتے ہوئے لکھا کیا پہلی بار اِس ملک میں کسی عورت کیساتھ زیادتی کی گئی ہے؟انہوں نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا یہ ہمارے ملک کی حقیقت ہے یہ یہاں عورت سڑکوں پر، بازاروں میں، اپنی گاڑیوں میں، اپنے گھروں میں اور اپنی قبروں میں بھی محفوظ نہیں ہیں۔معروف اداکارہ بشریٰ انصاری نے کہا خواتین سے بد اخلاقی کرنیوالے ملزموں عبرت کا نشان بنیایا جائے،میں مطالبہ کرتی ہوں ان مجرمان کے ہاتھ پاوں کاٹے جائیں تاکہ جو لوگ آج یا کل یہ گھناونا جرم کرنے کا سوچ رہے ہیں ان کے دلوں میں خوف آجائے۔

رد عمل

مزید :

صفحہ اول -