ڈیرہ ریجن:جرائم پیشہ عناصر کیخلاف بڑے آپریشن کا فیصلہ

  ڈیرہ ریجن:جرائم پیشہ عناصر کیخلاف بڑے آپریشن کا فیصلہ

  

ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر)ریجنل پولیس آفیسر محمد فیصل رانا نے ریجن کے چاروں اضلاع میں قانون شکنی کرنے والے گینگسٹرز کے خلاف گرفتاریوں کے منظم آپریشن (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

کا حکم دے دیاچاروں اضلاع کی پولیس مصدقہ اطلاعات کی روشنی میں حکمت عملی ترتیب دے کر نتیجہ خیز آپریشن شروع کرے ان خیالات کا اظہار ریجنل پولیس آفیسر محمد فیصل رانا نے ریجن کے چاروں اضلاع ڈیرہ غازی خان مظفر گڑھ لیہ اور راجن پور کے پولیس افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کیا آر پی او نے کہا کہ سوشل میڈیا کو قانون شکن عناصر منفی حوالے سے استعمال کر رہے ہیں شوقیہ قانون شکن سوشل میڈیا پر خود کو گینگسٹرز ثابت کرتے ہیں اسلحہ کے ساتھ اپنی تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر اپلوڈ کرتے ہیں بعض عناصر فحش اور نفرت انگیز مواد سے معاشرے کے امن کو چیلنج کرتے ہیں ان سب کو قانون کی لگام دینا ضروری ہے حکومت نے ایسے تمام قانون شکنوں کی گرفتاری کے حوالے سے پولیس کے علاوہ قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کو بھی خصوصی ٹاسک دیا ہے پولیس قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں سے مل کر مربوط حکمت عملی کے ذریعے سوشل میڈیا کے ذریعے قانون شکنی کا خوف پھیلانے والے قانون شکنوں کو گرفتار کرے انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا پر قانون کو چیلنج کرنے والوں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ناگزیر ہو چکی ہے اس سلسلہ میں اٹھائے جانے والے اقدامات سے ان کے دفتر کو روانہ کی بنیاد پر آگاہ رکھا جائے۔جبکہ آر پی او نے ریجن کے چاروں اضلاع میں شادیوں سمیت ہر قسم کی تقریبات میں ہوائی فائرنگ پر مکمل پابندی کے احکامات جاری کر دئیے اسلحہ لائسنسی ہو یا غیر قانونی ہر قسم کے اسلحہ کی نمائش  پر مکمل پابندی ہے شادیوں میں ہوائی فائرنگ سے جانی نقصان کی صورت میں دولہا اور شادی کے منتظمین کے خلاف بھی مقدمات درج ہوں گے ان خیالات کا اظہار ریجنل پولیس آفیسر ڈی آئی جی محمد فیصل رانا نے پولیس افسران کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا آر پی او نے کہا کہ ہوائی فائرنگ اور اسلحہ کی نمائش ایک طرف قانون کو کھلا چیلنج جبکہ دوسری طرف معاشرتی امن کے لئے بڑا خطرہ ہے ہمیں قانون کو چیلنج کرنے والوں کے ساتھ بھی قانون کی طاقت سے نمٹنا ہے جبکہ معاشرتی امن کے قیام کو بھی یقینی بنانا ہے انہوں نے کہا کہ شادی کی تقریبات میں لوگ ہوائی فائرنگ کر کے چند لمحات کے لئے اپنے لئے غیر قانونی خوشی حاصل کرنا چاہتے ہیں اس ہوائی فائرنگ سے کئی گھر اجڑ جاتے ہیں آر پی او نے دو ٹوک انداز میں کہا کہ شادی کی تقریبات سمیت ہر قسم کی تقریبات میں ہوائی فائرنگ اور اسلحہ کی نمائش پر مکمل پابندی ہے اگر شادی کی کسی تقریب میں فائرنگ ہوتی ہے اور اس سے کوئی جانی نقصان ہوتاہے تو پھر دولہا سمیت شادی کے منتظمین کے خلاف بھی مقدمات درج ہوں گے فیصل رانا نے کہا کہ اسلحہ کی نمائش اور ہوائی فائرنگ کو روکنا پولیس کی ذمہ داری ہے ضلعی پولیس کو اس حوالے سے مربوط حکمت عملی طے کرنا ہو گی ایس ایچ او اس بات کو یقینی بنائیں کہ شادیوں سمیت کسی بھی قسم کی تقریبات میں اسلحہ کی نمائش ہو نہ ہوائی فائرنگ ہو اگر پولیس اسلحہ کی نمائش اور ہوائی فائرنگ کو روکنے میں کامیاب ہو جاتی ہے تو متعدد جرائم از خود ختم ہو جائیں گیا۔

آپریشن فیصلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -