زرعی ترقی کیلئے ڈیمزکی تعمیر انتہائی ضروری ہے‘ حضوربخش لاڑ

  زرعی ترقی کیلئے ڈیمزکی تعمیر انتہائی ضروری ہے‘ حضوربخش لاڑ

  

 بہاولپور(ڈسٹرکٹ رپورٹر) مرکزی چیئر مین کسان بورڈ پاکستان جام (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

حضور بخش لاڑ نے کہا ہے کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے اوراسکی معیشت کاانحصار زراعت پرہے پاکستان کو زراعت کے حوالہ سے سونے کی چڑیا یا اناج گھرکہاجاتاہے مگربدقسمتی سے حکومت کے پاس زراعت کی ترقی کیلئے کوئی پروگرام نہ ہے زرعی مداخل انتہائی مہنگے کردیئے گئے ہیں بجلی،کھاد،سپرے زرعی آلات،ڈیزل کی قیمتوں میں ہوش ربااضافہ کردیاگیاہے جس کے باعث پاکستان میں زراعت سے وابستہ افراد اس شعبہ کوترک کرکے زرعی زمینوں پر ہاوسنگ سکیمیں بنارہے ہیں اورملک میں زراعت آہستہ آہستہ ختم ہوتی جارہی ہے انہوں نے کہاکہ ملک میں 30 فیصد پروڈکشن سٹوریج نہ ہونے کے باعث زرعی اجناس ضائع ہوجاتے ہیں انہوں نے کہاکہ اگر ڈیم بروقت بنالئے جاتے تو سیلاب اور مون سون کی بارشوں کاپانی محفوظ کیاجاسکتاہے اور سیلاب اورمون سون کی بارشوں سے اتنے وسیع علاقہ میں تباہی نہ آتی حالیہ سیلاب کے باعث سینکڑوں دیہات ڈوب گئے جبکہ محکمہ موسمیات،ڈیزاسٹرسیل پرسالانہ کروڑوں روپے کابجٹ ضائع ہوجاتاہے مگرسیلاب کی پیشگی آمد کے بارے میں ان کی کارکردگی انتہائی مایوس کن رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اللہ تعالی نے جتنے وسائل پاکستان کو دیئے ہیں دنیا کے کسی ملک کے پاس نہیں ہیں مگر انکو ایکسپلور(دریافت) نہیں کیاگیا جس کاخمیازہ عوام بھگت رہی ہے ملک میں لاقانونیت مہنگائی امن وعامہ جیسے حالات میں عوام کاجمہوریت پریقین ختم ہورہاہے کیونکہ جمہوریت کے ثمرات عوام تک نہیں پہنچائیں جارہے ہیں۔

حضور بخش لاڑ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -