مزدوروں کیلئے مقر کردہ کم سے کم ماہانہ اجرت پر ہر صورت عملدرآمد یقینی بنایا جائیگا: شوکت یوسفزئی 

    مزدوروں کیلئے مقر کردہ کم سے کم ماہانہ اجرت پر ہر صورت عملدرآمد یقینی ...

  

 پشاور (سٹاف رپورٹر) خیبرپختونخوا کے وزیر محنت و ثقافت شوکت علی یوسفزئی نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ مزدوروں کے بچوں کے لئے قائم ورکنگ فوکس گرائمر سکولوں کے معیار پر کوئی کمپرومائز نہیں ہوگا۔انہوں نے اعلان کیا کہ خیبرپختونخوا حکومت کی طرف سے مزدوروں کیلئے مقرر کردہ کم سے کم ماہانہ اجرت 17500 روپے پر ہر صورت عملدرآمد یقینی بنایاجائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ہری پور میں انصاف ویلفیئر ر ایسوسی ایشن کی حلف برداری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔قبل ازیں صوبائی وزیر نے ہری پور میں قائم ورکنگ فوکس گرائمر سکولوں کا دورہ بھی کیا۔صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی نے کہا کہ محنت کش ملک کا بہت بڑا اثاثہ ہیں، حکومت مزدوروں کی حالت کار کو بہتر بنانے کے لئے اقدامات کرے گی۔شوکت یوسفزئی نے کہا کہ صوبائی حکومت وزیر اعلیٰ محمود خان کی قیادت میں مزدوروں کو بہتر اور سازگار ماحول فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہے۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے مزدور کے لیے کم سے کم اجرت جو مقرر کی ہے اس پر عمل درآمد کے لیے اقدامات کیے جا رہے ہیں۔شوکت یوسفزئی نے کہا کہ مزدوروں کے بچوں کے لیے قائم سکولوں پر کروڑوں روپے ماہانہ خرچ کئے جاتے ہیں تاکہ ان کو معیاری تعلیم دی جا سکے۔انہوں نے کہا کہ ان سکولوں میں بھی سزا اور جزا کا عمل متعارف کرائیں گے اور ان کی نگرانی کے لئے آزاد اور غیر جانبدارانہ مانیٹرنگ یونٹ قائم کیا جائے گا۔شوکت یوسفزئی نے کہا کہ مزدوروں کی سوشل سیکورٹی اور EOBI کے ساتھ رجسٹریشن بہت بڑا چیلنج ہے تاہم اسے ہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخوا قدرتی طور پر سرمایہ کاری کے لیے بہتر ماحول رکھتا ہے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں امن کے قیام سے سب سے زیادہ فائدہ خیبرپختونخوا کو ہوگا۔شوکت یوسفزئی نے کہا کہ حالات بتا رہے ہیں کہ افغانستان کا مسئلہ حل ہونے کی طرف جا رہا ہے۔پاکستان افغانستان میں امن کے قیام کے لیے بہت پر امید ہے اور اس عمل کو بھرپور سپورٹ کر رہا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -