وزیر اعظم کی ریپ کے مجرموں کو نامرد بنانے کی تجویز، سرجری کے ذریعے کسی کو کیسے نامرد بنایا جاتا ہے؟ غریدہ فارقی نے وضاحت کردی

وزیر اعظم کی ریپ کے مجرموں کو نامرد بنانے کی تجویز، سرجری کے ذریعے کسی کو ...
وزیر اعظم کی ریپ کے مجرموں کو نامرد بنانے کی تجویز، سرجری کے ذریعے کسی کو کیسے نامرد بنایا جاتا ہے؟ غریدہ فارقی نے وضاحت کردی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) اینکر پرسن غریدہ فاروقی کے مطابق جب سرجری کے ذریعے کسی کو نامرد بنایا جاتا ہے تو اس کا عضو تناسل کاٹ دیا جاتا ہے۔

وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے ریپ کے مجرموں کو نامرد بنانے کی تجویز پر تبصرہ کرتے ہوئے غریدہ فارقی نے کہا کہ " وزیراعظم کہتے ہیں ریپ مجرمان کوجنسی نامرد بنا دینا چاہئیے۔ وزیراعظم ابھی اس بارے پڑھ رہے ہیں کہ یہ سزاکن ملکوں میں ہے لیکن chemical castrationاورسرجری دونوں کوجائزسمجھتے ہیں۔"

غریدہ فاروقی نے بتایا کہ سرجری میں مرد کا عضو تناسل کاٹ دیا جاتا ہے۔ کیمیکل کیسٹریشن میں عضو کاٹا نہیں جاتا ادویات سے نامرد بنایا جاتا ہے۔

خیال رہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے ایک ٹی وی انٹرویو میں ریپ کے مجرموں کا نامرد بنانے اور انہیں سرعام پھانسی دینے کی تجویز دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ کہ کئی ملکوں میں ریپ کے مجرموں کو نامرد بنادیا جاتا ہے ، وہ اس بارے میں پڑھ رہے ہیں۔ ایسے مجرموں کو یا تو کیمیکل کے ذریعے یا سرجری کے ذریعے نامرد بنایا جاسکتا ہے۔

ریپ کے کیسز کو بھی قتل کے مقدمات کی طرح درجہ بندی دی جانی چاہیے۔ فرسٹ ڈگری والے کو نامرد بنایا جائے، ان کو آپریشن کرکے ناکارہ کردیا جائے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -