حکومت نے شعبہ زراعت پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے، فخرامام 

حکومت نے شعبہ زراعت پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے، فخرامام 

  

 اسلام آباد (این این آئی)وفاقی وزیر قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخرامام نے کہا ہے کہ حکومت نے ابتداہی سے زراعت کے شعبہ پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے،وزارت قومی غذائی تحفظ وتحقیق کے ترقیاتی بجٹ کو ایک ارب سے بڑھا کر 30ارب کر دیا ہے۔پیر کو پاکستان زرعی تحقیقاتی کونسل کے زرعی سائنسدانوں کی ایسو سی ایشن پی اے ار سی سائنٹسٹ پینل کی حلف برداری تقریب کاانعقاد قومی زرعی تحقیقاتی مرکز اسلام آباد میں ہوا۔ تقریب سے مہمان خصوصی وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام تھے۔ تقریب میں چیئر مین پی اے آرسی ڈاکٹر محمد عظیم خان، پی اے آرسی کے ٹیکنیکل ممبران، سید شمیم السبطین شاہ ڈی جی این اے آرسی اور زرعی سائنسدانوں نے شرکت کی۔ حلف برداری تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سید فخرامام نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ابتداہی سے زراعت کے شعبہ پر خصوصی توجہ مرکوز کی ہوئی ہے کیونکہ ملک کی 70فی صد آبادی کا انحصار زراعت پر ہے اور 45فی صد لوگوں کا روزگار زراعت سے وابستہ ہے نیز جی ڈی پی میں زراعت کا اہم کردار ہے، ہماری حکومت نے وزارت قومی غذائی تحفظ وتحقیق کے ترقیاتی بجٹ کو ایک ارب سے بڑھا کر 30ارب کر دیا ہے، اس کے علاوہ وزیر اعظم زرعی ایمرجنسی پروگرام کے تحت گندم، گنے، دالیں، چاول اور تیلدار اجناس کی پیداوار کو ملکی ضروریات کے مطابق بڑھانے اور ملک کو زرعی اجناس میں خود کفیل کرنے کے لئے اہم اقدامات کئے ہیں۔ زراعت کی بہتری کے لئے دیگر اہم اقدامات میں ہائبرڈ سیڈ ٹیکنالوجی، جینیٹک انجنیئرنگ اور جدید ٹیکنالوجی کا استعمال، آبی ذخائر، چراگاہوں اور دیگر زرعی ذخائر کا تحفظ، زیادہ دودھ اور زیادہ گوشت پیدا کرنے والے جانوروں کی جدید طریقوں سے افزائش نسل اور زرعی سائنسدانوں کی پیشہ ورانہ صلاحیتیں بڑھانے کے لئے زیادہ سے زیادہ قومی اور بین الاقوامی تربیت کے مواقع فراہم کرنا شامل ہیں۔اس کے علاوہ ملک کے زرعی تحقیقی اداروں کی بہتری کے لئے فنڈ ز کی مستقل بنیادوں پر فراہمی کو یقینی بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے

  سید فخرامام

مزید :

صفحہ آخر -