علی پور: جرائم پیشہ عناصر کا شہریوں پر وحشیانہ تشدد‘ لوٹ مار 

علی پور: جرائم پیشہ عناصر کا شہریوں پر وحشیانہ تشدد‘ لوٹ مار 

  

  خیرپورسادات(نمائندہ پاکستان)  درجن سے زائد مسلح افرادنے  نہتے شہریوں پر تشدد کیا موٹر سائیکل،نقدی،موبائل فون چھین لئے،پولیس تھانہ سیت پور کا ملزمان کو مکمل تحفظ،چھینے گئے موٹرسائیکل برآمد کرنے کے باوجودمقدمہ کا اندراج نہ کیا، ا تفصیلات کیمطابق۔ علی پور، موضع ملک ارائیں حدود تھانہ سیت پور کے رہائشی ملازم حسین ارائیں نے صحافیوں کو اپنا بیان دیتے (بقیہ نمبر2صفحہ6پر)

ہوئے کہا کہ چند روز قبل میں ہمراہ صادق حسین، باقر حسین،الطاف حسین برادرم اپنی دکان سے گھر کی جانب جارہے تھے کہ اچانک دوکان پر بیٹھے مسؤل علیہان طالب،فدا،نازک،ریاض،عبدالرزاق، سجاد،قاسم، اجمل،ناظم،شاہد،بلال، عبدالمجید،رفیق،ثقلین،ہاشم،ناظم، وغیرہ نے ہمیں گینگ کی شکل اختیار کرتے ہوئے جوکہ مسلح آتشیں اسلحہ،ڈنڈے سوٹے تھے نے روڈ کے قریب روک لیا۔اور ہمیں شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔مسؤل علیہان نے ہم سے نقدی رقم مبلغ باؤن ہزار روپے،چار موٹر سائیکل اور موبائل فون چھین لئے۔ملازم حسین نے بتایا کہ موقع ملتے ہی وہاں سے بھاگ گئے اور تھوڑی دور جاکر مقامی پولیس تھانہ سیت پور کو بذریعہ 15 کال اطلاع دی جوکہ موقع پر آگئے جنہوں نے جائے وقوعہ کا معائنہ اور موجود افراد سے پوچھ گچھ کرنے کے بعد ہمیں تھانہ لے آئے۔جہاں پر بغرض کاروائی اندراج رپٹ کے بعد جملہ ملزمان کے ٹھکانوں پر ریڈ مار کر چاروں موٹر سائیکلوں کو برآمد کرلیا۔لیکن متذکرہ بالا اشخاص موقع سے فرار ہوگئے۔مزید ملازم حسین نے بتایا کہ مقامی بااثر زمیندار رئیس حفیظ اور اسکا بیٹا افتخار عرف حاجی ملک کی مداخلت پر ایس ایچ او تھانہ سیت پور نے ملزمان کیخلاف کاروائی،اندراج مقدمہ کرنے سے انکار کردیا۔بلکہ الٹا دھمکاتے ہوئے ناجائز مقدمہ میں پھنسا دینے کا کہا۔متاثرہ شخص ملازم حسین نے ڈی پی او مظفرگڑھ سے انصاف کی اپیل کرتے ہوئے کہا وقوعہ کا از خود نوٹس لے کر مرتکب افراد کیخلاف کاروائی کرنے کا حکم دیں۔   

مزید :

ملتان صفحہ آخر -