اخراج مقدمہ کیلئے مونس الٰہی کی درخواست پر ایف آئی اے کو نوٹس، جواب طلبی

اخراج مقدمہ کیلئے مونس الٰہی کی درخواست پر ایف آئی اے کو نوٹس، جواب طلبی

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس اسجد جاوید گھرال نے ایف آئی اے منی لانڈرنگ مقدمہ کے اخراج کیلئے  چودھری پرویز الہٰی کے صاحبزادے مونس الٰہی کی درخواست پر ایف آئی اے کو نوٹس جاری کر کے جواب طلب کر لیا مونس الہی کی جانب سے امجد پرویز ایڈووکیٹ ایف آئی اے سمیت دیگر کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیارکیاہے کہ ایف آئی اے نے بدنیتی کی بنیاد پر منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا۔ مونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ سیاسی انجینئرنگ کیلئے بنایا گیا، چودھری مونس الٰہی کا میڈیا ٹرائل کرنے کیلئے منی لانڈرنگ کا الزام لگایا گیا، نیب کے قانون کو تمام فوجداری قوانین پر برتری حاصل ہے اور نیب انہی الزامات پر کلین چٹ دے چکا ہے، نیب نے 20 سال آمدن سے زائد اثاثوں کی انکوائری جاری رکھی مگر کچھ بھی نہیں ملا، کسی بنک یا اکاؤنٹ ہولڈر نے مونس الٰہی کیخلاف ایف آئی اے کو کوئی شکایت بھی درج نہیں کروائی، ایف آئی اے کے پاس کرپشن، کرپٹ پریکٹس، اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام کا کوئی ثبوت بھی موجود نہیں ہے  عدالت سے استدعاہے کہ درخواست گزار کیخلاف منی لانڈرنگ کا درج مقدمہ خارج کیا جائے،  

مونس الٰہی 

مزید :

صفحہ آخر -