6سالہ بچی قتل، ملزم مدعی کارشتہ دار،بچانے کی کوششیں 

6سالہ بچی قتل، ملزم مدعی کارشتہ دار،بچانے کی کوششیں 

  

بوریوالا(تحصیل رپورٹر)تھانہ صدر کی حدود میں واقع نواحی گاوں 265ای بی میں دردندہ صفت ملزم نے6سالہ معصوم بچی ایمان فاطمہ کو بداخلاقی کے بعد بے دردی سے(بقیہ نمبر16صفحہ نمبر6)

 قتل کر کے اسکی لاش گاوں ہی کے سیوریج کے تالاب میں پھینک دی تھی میڈیکل رپورٹ میں بھی بچی کے ساتھ بداخلاقی ثابت ہو گئی تھی پولیس نے بچی کے والد محمد امجد کی مدعیت میں مقدمہ درج کرنے کے بعد چند روز بعد ملزم ارسلان عرف علی کو گرفتار کر لیا جو کہ مقتولہ ایمان فاطمہ کا پھوپھو زاد کزن ہے جو اپنے والد کی وفات کے بعد اپنی والدہ اور بہن بھائیوں کے ہمراہ اسی گھر میں زیر کفالت تھا ایمان فاطمہ کی والدہ خواتین کے کپڑے سلائی کر کے انکا پیٹ پال رہی تھی6سالہ مقتولہ ایمان فاطمہ کی والدہ نے اپنے بھائی اور رشتہ داروں کے ہمراہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ چونکہ ملزم میرے شوہر مدعی مقدمہ کا بھانجا ہے تو اب وہ اسے تفتیش کے دوران فائدہ پہنچاتے ہوئے سزا سے بچانا چاہتا ہے اور مجھے بھی ملزم اور اسکی والدہ کے ساتھ صلح کرنے کے لیے مجبور کیا جا رہا ہے میرے انکار کرنے پر میرے شوہر مدعی مقدمہ نے مجھے گھر سے نکال دیا ہے غم سے نڈھال ماں نے آئی جی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ میرٹ پر مقدمہ کی تفتیش جلد مکمل کر کے ملزم کو سزا دلوائی جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -