کرپشن، جرائم پیشہ افراد سے رابطے، ملتان میں 53پولیس اہلکار معطل 

کرپشن، جرائم پیشہ افراد سے رابطے، ملتان میں 53پولیس اہلکار معطل 

  

ملتان(وقائع نگار)کرپشن، جرائم پیشہ افراد سے تعلقات اور منشیات کے استعمال میں ملوث ہونے پر ملتان پولیس کے 53 ملازمین کو معطل کر دیا گیا، معطل ہونے والوں میں سب انسپکٹر، اے ایس آئیز، محرر، ڈولفن سکواڈ کے اہلکار بھی شامل ہیں۔ معطلی کے احکامات سی پی او ملتان نے جاری کیے ہیں، معطل ہونے والوں میں تھانہ راجہ رام کے انچارج انویسٹیگیشن و ہومی سائیڈ سب انسپکٹر شوکت حیات، اے ایس آئیز(بقیہ نمبر23صفحہ نمبر6)

 لعل خان، صفدر حسین، غلام حسین، اشفاق تبسم، عبدالغفار اور جواد حسین شامل ہیں، تھانہ لوہاری گیٹ کا محرر فیصل کیانی، بستی ملوک کا محرر زاہد حسین، سٹی جلالپور پیر والہ کے محرر عامر صیام اور نائب محرر مظہر حسین بھی معطل ہونے والوں میں شامل ہیں،معطل ہونے والوں میں ڈولفن فورس کے چار اہلکار شہزاد بخاری، محمد ذیشان، محمد سرفراز اور محمد عاصم سمیت گلگشت، لوہاری گیٹ، قادر پور راں، سیتل ماڑی اور تھانہ صدر جلالپور پیر والہ کے ڈرائیور بھی شامل ہیں۔دریں اثناء ایڈیشنل آئی جی نے جنوبی پنجاب میں پولیس ملازمین کا نفسیاتی معائنہ کروانے کا حکم دے دیا ہے، نفسیاتی مسائل کا شکار پولیس ملازمین کو فیلڈ ڈیوٹی دینے سے بھی منع کر دیا گیا ہے۔ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب نے جنوبی پنجاب کے تینوں آر پی اوز سمیت ضلعی پولیس سربراہان کو مراسلہ جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ڈیوٹی کی وجہ سے پولیس ملازمین  نفسیاتی مسائل کا شکار ہو جاتے ہیں، اس لیے انہیں فوری طور پر فیلڈ ڈیوٹی سے ہٹایا جائے، مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ملازمین کی فلاح و بہبود ضلعی افسران کا اولین فرض ہے اس لیے نفسیاتی عدم توازن کے شکار پولیس ملازمین کے علاج معالجے کا بندوبست بھی کیا جائے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -