سپریم کورٹ، پی ٹی آئی ارکان کے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کیخلاف اپیل اعتراضات کیساتھ واپس

سپریم کورٹ، پی ٹی آئی ارکان کے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کیخلاف اپیل ...

  

       اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں) رجسٹرار سپریم کورٹ نے پی ٹی آئی ارکان قومی اسمبلی کے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کیخلاف درخواست اعتراضات لگا کر واپس کر دی۔تحریک انصاف نے سپیکر کی جانب سے ارکان کے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری اور اس حوالے سے اسلام آباد ہائی کورٹ کے فیصلے کو عدالت عظمیٰ میں چیلنج کیا تھا۔اسد عمر کی جانب سے اپیل دائر کی گئی تھی، جس میں سپریم کورٹ سے اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم کرنے کی استدعا کی گئی تھیرجسٹرار سپریم کورٹ نے درخواست نامکمل ہونے پر واپس کردی۔درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ عدالت سپیکر راجہ پرویز اشرف کی جانب سے استعفوں کی مرحلہ وار منظوری کو غیر قانونی اور غیر آئینی قرار دے۔درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ تحریک انصاف نے عوام سے تازہ مینڈیٹ لینے کیلئے قومی اسمبلی سے مستعفی ہونے کا فیصلہ کیا تھا، تحریک انصاف کے ارکان قومی اسمبلی سے استعفیٰ دے چکے ہیں، ڈپٹی سپیکر قاسم سوری نے اسمبلی فلور پر تحریک انصاف کے 125 ارکان کے استعفوں کی منظوری کا اعلان کیا تھا، سپیکر راجہ پرویز اشرف کی مرحلہ وار استعفوں کی منظوری طے کردہ اصولوں کی خلاف ورزی ہے۔

اپیل پر اعتراضات 

مزید :

صفحہ اول -