سوات میں بم دھماکہ، کرم ایجنسی میں فائرنگ، فورسز کے 5جوانوں سمیت 8شہید

    سوات میں بم دھماکہ، کرم ایجنسی میں فائرنگ، فورسز کے 5جوانوں سمیت 8شہید

  

      منگورہ (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) سوات  کے علاقے کبل برہ بانڈئی  میں ریموٹ کنٹرول کے ذریعے کئے جانے والے بم دھماکے میں 5 افراد جاں بحق اور متعد زخمی ہوگئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ بم حملے میں رکن امن کمیٹی ادریس خان سمیت 5 افراد شہید ہوگئے ہیں جبکہ زخمیوں کو سیدوشریف ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے، ۔ڈی پی او زاہد مروت کے مطابق شہید افراد میں 2 پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے ضلع سوات میں دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی خیبرپختونخوا کو واقعے کی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ واقعہ میں ملوث شرپسند عناصر کو کیفرِ کردار تک پہنچانے کے لیے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جائیں۔ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ سے جاری ایک مذمتی بیان میں وزیراعلی نے کہا کہ معصوم انسانیت کو نشانہ بنانا ایک غیر انسانی فعل ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ وزیراعلی نے دھماکے میں سکیورٹی اہلکاروں سمیت قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے شہداء کے درجات کی بلندی اور پسماندگان کے لئے صبر جمیل کی دعا کی ہے۔ محمود خان نے کہا کہ اس صوبے کے عوام نے خطے میں امن کی بحالی کے لیے لازوال قربانیاں دی ہیں، ہم ان کی قربانیوں کو کسی صورت رائیگاں نہیں جانے دیں گے۔

دھماکہ

 پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)خیبر پختونخوا کے ضلع کرم میں سرحد پار سے دہشتگردوں کی فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کے 3جوان شہید ہوگئے۔انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے مطابق پاک فوج کی جانب سے دہشت گردوں کے خلاف جوابی کارروائی کی گئی، پاک فوج کی بھرپور جوابی کارروائی سے دہشتگردوں کا بھاری جانی نقصان ہوا ہے۔شہید جوانوں میں نائیک محمد رحمان، نائیک معویز خان اور سپاہی عرفان اللہ شامل ہیں۔ا?ئی ایس پی ا?ر کا کہنا ہے کہ پاکستان دہشتگردوں کی جانب سے افغان سر زمین استعمال کرنے کی  شدید مذمت کرتا ہے، پاکستان توقع کرتا ہے افغان حکومت مستقبل میں ایسی کارروائیوں کی اجازت نہیں دیگی، پاک فوج دہشت گردی کی لعنت سیملکی سرحدوں کے دفاع کا عزم کیے ہوئے ہے۔

فائرنگ

مزید :

صفحہ اول -