زندہ قومیں قدرتی آفات سے خندہ پیشانی سے مقابلہ کرتی ہیں: فیصل امین گنڈہ پور

زندہ قومیں قدرتی آفات سے خندہ پیشانی سے مقابلہ کرتی ہیں: فیصل امین گنڈہ پور

  

       پشاور (سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر بلدیات، انتخابات و دیہی ترقی سردار فیصل امین گنڈاپور نے کہا ہے کہ ڈیرہ اسماعیل خان کی تمام تحصیلوں میں سیلاب متاثرین کیلئے ریسکیو اور ریلیف کا کام زور و شور سے جاری ہے جبکہ سیلاب زدگان کی بحالی کا آپریشن بھی ہنگامی بنیادوں پر شروع کیا جا رہا ہے تاکہ نہ صرف انکی جان و مال کا تحفظ یقینی بنایا جا سکے بلکہ سردیوں سے پہلے انکی گھروں میں آباد کاری بھی ممکن بنائی جا سکے۔ اس امر کا اظہار انہوں نے ڈیرہ اسماعیل خان کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں اور ریلیف کیمپوں کے تفصیلی دورے کے دوران کیا۔ کمشنر و ڈپٹی کمشنر ڈیرہ اسماعیل خان، محکمہ بلدیات، ریسکیو 1122 اور دیگر متعلقہ محکموں کے حکام کے علاؤہ امدادی کارروائیوں میں مصروف پاک فوج کے نمائندے بھی انکے ساتھ تھے۔ سردار فیصل امین گنڈاپور نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ صوبے کے مختلف امدادی اداروں کے ساتھ ساتھ پاک فوج کے جوان بھی متاثرین کی مدد اور ریلیف کی سرگرمیوں میں مشترکہ طور پر بھرپور انداز میں شریک ہے۔ وزیر بلدیات کا کہنا تھا کہ زندہ قومیں قدرتی آفات کا اسی طرح پورے حوصلے اور خندہ پیشانی سے مقابلہ کرتی ہیں اور آج پاکستانی قوم بھی اس امتحان میں سرخرو ہوئی ہے۔ انہوں نے یقین دلایا کہ ہم اس وقت تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک سیلاب سے متاثرہ ہر فرد کو مدد اور ریلیف فراہم نہ کیا جائے اور انکی اپنے گھروں میں واپسی اور بحالی بھی مکمل نہ ہو جائے۔ انہوں نے اس بات پر بھی اظہار مسرت کیا کہ محکمہ بلدیات کے تمام ادارے بھی دوسرے امدادی ایجنسیوں کے شانہ بشانہ متاثرین کو فوری ریلیف اور ریسکیو خدمات فراہم کرنے کیلئے شبانہ روز سرگرم عمل ہیں تاکہ جانی و مالی نقصانات کو کم سے کم کیا جا سکے۔ فیصل امین گنڈاپور نے ضلعی انتظامیہ بالخصوص محکمہ صحت و ریلیف کو امدادی کیمپوں میں صحت و صفائی اور غذائی ضروریات کا معیار زیادہ بہتر بنانے کی ہدایت کی۔ انہوں نے  واضح کیا کہ ہم بحران سے نمٹنے کے لیے تمام ممکنہ اور ضروری اقدامات اٹھا رہے ہیں اور اس مقصد کیلئے صوبائی حکومت اپنے تمام دستیاب وسائل ہنگامی بنیادوں پر بروئے کار لا رہی ہے۔

مزید :

صفحہ اول -