جنوبی پنجاب میں اورنج لائن کی جانب سے متاثرین کو ا مداد

جنوبی پنجاب میں اورنج لائن کی جانب سے متاثرین کو ا مداد

  

کراچی (پ ر)چین اور پاکستان کے درمیان برادرانہ تعلقات کو نبھاتے ہوئے اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کی نمائندگی کرنے والے 20 ملازمین اور رضاکاروں کے ایک گروپ نے جام پور کے سیلاب متاثرین میں ضروریاتِ زندگی کی اشیا تقسیم کیں جو کہ جنوبی پنجاب کے ضلع راجن پور میں حالیہ سیلاب سے متاثر ہونے والے شہروں میں سرِفہرست ہے۔ سیلاب سے شدید متاثر ہونے والوں کی مدد کے لیے خصوصی طور پر تیار کیے گئے امدادی پیکج میں تیار شدہ کھانے کی اشیا، حفظان صحت سے متعلق مصنوعات، اشیا خوردونوش اور نقد امدادشامل ہیں جن کی مالیت 20 لاکھ روپے ہے۔ا یک امدادی پیکج  6-8اراکین کے گھرانے کوایک ماہ کے لئے خوراک فراہم کرسکتا ہے۔سلیمان رینج میں موسلادھار بارشوں سے بڑے پیمانے پر سیلاب آیا جس سے ضلع راجن پور میں دو واٹر چینلز کے حفاظتی بندمیں شگاف پڑ گیا۔ سیلابی پانی نے چک شہید نالے کے حفاظتی بند کو بھی توڑ دیا جس سے گاں کے گردونواح میں سیلاب آ گیااور یہاں کے 2500 مکین باقی علاقوں سے کٹ گئے۔ حالیہ مون سون بارشوں کی وجہ سے ضلع راجن پور کی تحصیل روجھان اور جام پور کے علاقوں کو شدید نقصانات کا سامنا کرنا پڑا جس کی وجہ سے امدادی ٹیموں کے لیے متاثرہ علاقوں تک پہنچنا مشکل ہوگیا اور لاکھوں لوگوں کو اپنا گھر بار چھوڑ کردیگر علاقوں میں پناہ تلاش کرنے کی غرض سے نکلنا پڑا۔اس حوالے سے بات کرتے ہوئے اورنج لائن میٹرو ٹرین لاہور کے سی ای او لی چن نے کہاکہ اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبہ چین پاکستان کی لازوال دوستی کی ایک بہترین مثال ہے۔اس وسیع پیمانے کی قدرتی آفت کے دوران ہم اپنے پاکستانی بھائیوں اور بہنوں کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں تاکہ اس مشکل گھڑی میں ان کی مدد کے لئے کی جانے والی امدادی سرگرمیوں میں اپنا حصہ ڈال سکیں۔ اس کڑے وقت میں جب کہ لاکھوں انسانی جانیں ضائع ہو چکی ہیں، لاتعداد خاندان بے گھر ہو چکے ہیں اور بڑے پیمانے پر سیلاب کی وجہ سے بہت سے شہروں کا بنیادی ڈھانچہ بہہ گیا ہے، اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کی جانب سے کی جانے والی یہ امداد بہت اہمیت کی حامل ہے۔ہمیں اس بڑے بحران سے نکلنے اور اس سے ہونے والے نقصانات کا ازالہ کرنے کے لئے مزیدمشترکہ کوششوں کی ضرورت ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -