حکومت کو پیغام ہے کہ تیاری کر لیں، جتنا تنگ کرینگے ہم اتنے ہی مضبوط ہوں گے ، عمران خان 

حکومت کو پیغام ہے کہ تیاری کر لیں، جتنا تنگ کرینگے ہم اتنے ہی مضبوط ہوں گے ، ...
حکومت کو پیغام ہے کہ تیاری کر لیں، جتنا تنگ کرینگے ہم اتنے ہی مضبوط ہوں گے ، عمران خان 

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان خاتون جج کو دھمکیاں دینے کے کیس میں  ایس ایس پی آفس میں  جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہو گئے ، پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  عمران خان نے کہا کہ  حکومت کو پیغام ہے کہ تیاری کر لیں، جتنا تنگ کرینگے ہم اتنے ہی مضبوط ہوں گے۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ  دہشتگردی کا مقدمہ اور جے آئی ٹی میں حاضری بھی ایک مذاق کے سوا کچھ نہیں ہے۔ حکومت کو پیغام دیتا ہوں کہ اس ماہ عوام کا سمندر باہر نکلے گا ، ہر کام آئین و قانون کے دائرے میں رہ کر کیا ، ہمیں جتنا دیوار سے لگائیں گے ہم اتنا ہی مضبوط ہونگے ، میں نے 26 سالہ سیاست میں کسی قانون کی خلاف ورزی نہیں کی ، دہشتگردی کی تعریف دنیا اچھے سے جانتی ہے ،  مقدمے کی وجہ  سے ہم پر دنیا ہنس رہی ہے ، مجھے کہا جا رہا ہے کہ سیلاب پر سیاست نہ کرو اور دوسری طرف مجھے ختم کیا جا رہا ہے ،   ہمیں سیاسی فنڈنگ کرنیوالوں کو ہراساں کیا جا رہا ہے۔

عمران خان نے مزید کہا کہ حکمرانوں سے معیشت سنبھل نہیں پا رہی ، پاکستان سری لنکا کے نقش قدم پر چل رہا ہے ، جب میں نے کال دی تو حکومت برداشت نہیں کر پائے گی ،  حکومت سے صرف صاف و شفاف الیکشن پر بات ہوسکتی ہے۔

خیال رہے کہ  عمران خان خاتون جج کو دھمکی دینے کے کیس میں جے آئی  ٹی کے سامنے  پیش ہوئے تھے ،  سابق وزیر اعظم نے  ایس ایس پی انویسٹی گیشنز کے سامنے پیش ہو کر  جے آئی ٹی میں اپنا بیان ریکارڈ کرایا ، پولیس ٹیم کی جانب سے  چیئرمین پی ٹی آئی کو تحریری طور پر  21 سوالات پر مبنی سوالنامہ دیا گیا جبکہ پولیس نے زبانی سوالات بھی پوچھے ۔

 عمران خان نے اپنے وکیل کے ذریعے  پہلے سے ہی جمع بیان دوبارہ  دیا  جس میں کہا گیا کہ شہباز گل پر تشدد کے حوالےسے اپنی تقریر میں کوئی دہشتگردی نہیں کی ، جو تقریر کی وہ دہشتگردی کے زمرے میں نہیں آتی  ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -