مزہب یا فرقے کے نام پر ووٹ مانگنا جرم ہے الیکشن کمیشن نے نیا ضابطہ جاری کر دیا

مزہب یا فرقے کے نام پر ووٹ مانگنا جرم ہے الیکشن کمیشن نے نیا ضابطہ جاری کر دیا ...

                  اسلام آباد(اےن اےن آئی)الےکشن کمےشن آف پاکستان نے مذہب ےا فرقہ کا واسطہ دے کر ووٹ مانگنا جرم قراردےتے ہوئے کہاہے کہ وٹروں کو پولنگ اسٹےشن سے بغےرووٹ ڈالے نکالنا قابل سزجرم ہوگا،پولنگ عملہ قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی کسی امےدوار کے حق مےں ترغےب نہےں دے سکتے پولنگ اسٹےشن کے400گزکی حدود مےں انتخابی مہم چلائی جاسکتی، ووٹ کی پرچی پولنگ بوتھ سے باہر لے جانابھی منع ہے اتوار کو الےکشن کمےشن نے غےرمعمولی اقدام کرتے ہوئے امےدواروں کےلئے نےاضابطہ اخلاق جاری کردےاہے،جس مےں کہاگےا کہ عوامی نمائندگی اےکٹ کے تحت امےدوار مذہب ےافرقہ پرستی کو فروغ نہےں دے سکتے ووٹروں کو پولنگ اسٹےشن سے بغےرووٹ ڈالے نکالنا قابل سزاجرم ہوگا،پولنگ عملہ قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی کسی امےدوار کے حق مےں ترغےب نہےں دے سکتے،الےکشن کمےشن نے کہاکہ ووٹروں کو مفت ٹرانسپورٹ بسمول کشتی پر سفر کی سہولت دےنے کا اقدام بھی قابل سزاجرم ہوگا،پولنگ اسٹےشن کے400گزکی حدود مےں انتخابی مہم نہےں چلائی جا سکتی، ووٹ کی پرچی پولنگ بوتھ سے باہر لے جانابھی منع ہے ،الےکشن کمےشن کے مطابق جو امےدواران ہداےات پر عمل نہےں کرے گا تواسے نااہل بھی قراردےاجاسکتا ہے ۔الےکشن کمےشن آف پاکستان نے عام انتخابات کے شفاف،آزادانہ اور غےرجانبدارانہ انعقاد کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہاکہ وہ ملک کے چاروں صوبوں مےں غےر جانبداری کو ےقےنی بنانے کےلئے کوشاں ہے ،نگراں حکومت نے ملک بھر مےں بےوروکرےسی کے انتخابی عمل پر اثرانداز ہونے کے پےش نظر اسے تنبےہہ کردی گئی ہے وزےراعظم جسٹس(ر)مےرہزارخان کھوسہ نے انتخابات پر اثرانداز ہونےوالے افسران کے تبادلوں کے احکامات جاری کرتے ہوئے واضح کردےاہے،کہ کسی بھی سرکاری افسراوردےگر ملازمےن کی جانب سے کسی سےاسی جماعت ےاامےدوارکی حماےت ہر گزبرداشت نہےں کی جائے گی، جبکہ انتخابات کے عمل کی نگرانی کرنے والے اےک ادارے نے ےہ بھی مطالبہ کےاہے،کہ جن کے تبادلے کےے جارہے ہےں ےا ہٹاےاجارہاہے ان کے بارے مےں بتاےا جانا چاہئے کہ ان مےں کےاخرابی تھی،نگراں وفاقی وزراکو افسران ملازمےن کی کڑی نگرانی کی ہداےت کی گئی ہے ،سرکاری ذرائع کے مطابق نگراں حکومت کی جانب سے سرکاری افسران کا انتبہاہ کےاگےا ہے کہ وہ کسی صورت انتخابی عمل پر اثرانداز ہونے کی کوشش نہ کرےں کسی امےدوار کی ناجائز حماےت نہ کی جائے،وزےراعظم نے افسران کے تبادلوں کا اختےار متعلقہ وزراکو دے دےاہے،انتخابات پر اثرانداز ہونے والے افسران کے تبادلوں کا حکم جاری کرتے ہوئے وزراکو شکاےات کا سختی سے نوٹس لےنے کی بھی ہداےت کی گئی افسران کو ہداےت کی گئی ہے کہ غےرجانبدارروےہ اختےار کرےں،انتخابات کے عمل کی نگرانی کرنےوالی اےک غےرسرکاری تنظےم کے نے امرےکی نشرےاتی سے گفتگو مےں مختلف محکموں مےں کےے جانےوالے تبادلوں کے تناظرمےں کہا کہ الےکشن کمےشن کو ےہ اختےار حاصل ہے کہ وہ شفاف انتخابات کےلئے جہاں چاہے سرکاری افسران کے تبادلے کےلئے حکومت کوہداےت کرسکتا ہے ےہ شفافےت کےلئے بہت ضروری ہے لےکن اس مےں اےک چےز کو بھی ملحوظ خاطررکھنا چاہئے،کہ جس لوگوں کے تبادلے کےے جارہے ہےں ےا ہٹاےا جارہا ہے ان کے بارے مےں بتاےا جانا چاہئے کہ ان مےں کےاخرابی تھی،ادھر گزشتہ روز الےکسن کمےشن کے سےکرٹری اشتےاق احمد خان نےالےکشن کمےشن کے عام انتخابات کے شفاف آزادانہ اورغےر جانبدارانہ انعقاد کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہاہے کہ وہ ملک کے چاروں صوبوں مےں غےر جانبداری کو ےقےقنی بنانے کےلئے کوشاں ہے ےہ عزم انہوںنے مےڈےا سے بات چےت مےں کےا۔

مزید : صفحہ اول