خسرہ سے لاہور میں مزید ایک بچی مظفر گڑھ میں دو سگی بینیں جاں بحق

خسرہ سے لاہور میں مزید ایک بچی مظفر گڑھ میں دو سگی بینیں جاں بحق

      لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) صوبائی دارالحکومت میں خسرے نے خطرے کی گھنٹی بجادی، مزید ایک بچی جاں بحق ہوگئی جبکہ گذشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید 21نئے متاثرہ بچے میو ہسپتال میں داخل کیے گئے ہیں جس کے بعد اپریل میں خسرے سے متاثرہ بچوں کی تعداد دوسوسے زائد ہوگئی ہے ۔ لاہور میں خسرے کی وباپھوٹ پڑی اورتین روز قبل سنگھ پورہ کے علاقے سے میو ہسپتال میں لائی گئی تین سالہ اقراءجان کی بازی ہارگئی ہیں جس کے بعد ہلاکتوں کی تعداد چالیس ہوگئی ہے جبکہ ہر روز خسرے سے متاثرہ بچوں کی تعداد میں اضافہ دیکھنے کو آرہاہے ، رواں سال کے ابتدائی چار ماہ کے دوران 1100سے زائد بچے ہسپتال لائے گئے ۔ والدین کاکہناہے کہ بعض بچوں کو ویکسین بھی لگوائی گئی تاہم بعض مریضوں کو ویکسینیشن نہیں کروائی جاسکی ۔ ایم ایس ڈاکٹر زاہد پرویز نے بتایاکہ بچوں کی نگہداشت کیلئے دوخصوصی وارڈ بنادی گئی ہیں جبکہ تشویشناک حالت میں لائے جانیوالے بچوں کو ایمرجنسی میں ہی طبی امداد دی جارہی ہے ۔ وارڈ انچارج ڈاکٹر نے گذشتہ روز ہونیوالی چار ہلاکتوں کی خبروں کی تردید کرتے ہوئے بتایاکہ زیادہ ترچھ سے آٹھ ماہ کے بچے لائے جارہے ہیں ، گزشتہ روز خسرے سے متاثرہ تین بچوں کی اموات ہوئی ، چوتھی بچی کو نمونیا تھا۔ مظفرگڑھ کی تحصیل علی پور کے موضع فتح پور جنوبی بستی والوٹ دو سگی بہنیں خسرہ کی بیماری سے جاںبحق ہو گئیں ، مزید بچوں میں بھی خسرہ کی وباءپھیل گئی۔موضع فتح پور جنوبی بستی والوٹ میں خسرہ کی بیماری کی وجہ سے تین سالہ فرزانہ بی بی جاں بحق ہو گئی۔اس کی بڑی بہن چھ سالہ شہانہ بی بی ہلاک ہو گئی ہے۔جبکہ اس بستی میں اب تک دس سے زائد بچوں میں خسرہ میں مبتلا ہونے کی تصدیق کی جا چکی ہے اور محکمہ صحت کی طرف سے ابھی تک کوئی اقدامات نہ کیے گئے ہیں۔فرزانہ بی بی کے ماں آمنہ بی بی نے روتے ہوئے کہا ہے کہ میری دو بیٹیاں تھیں جو کہ محکمہ صحت کی ناقص پالیسی کی وجہ میر ی ننھی منی بچیاںموت کی آغوش میں سو گئی۔میرا ہستا بستا گھر اجڑ گیا ہے۔ وزارت صحت سے اپیل ہے کہ اس خسرہ جیسی مہلک بیماری سے نجات دلائے۔ پنجاب میں خسرہ بیماری تیزی سے پھیل رہی ہے۔ لاہور میں آج بھی خسرہ میں مبتلا درجنوں بچوں کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔پنجاب کی نگراں حکومت کی جانب سے اس وبا کی روک تھام کیلئے اقدامات کیئے جا رہے ہیں۔ لاہور میں آج بھی خسرہ میں مبتلا درجنوں بچوں کو اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔گزشتہ روز بھی لاہور میں خسرہ سے ایک ہی دن میں چار بچے جاں بحق ہوئے تھے اورعلی پورمیں بھی خسرے سےدو بہنیں جاں بحق ہوئیں تھیں۔ پنجاب میں خسرہ سے متاثرہ بچوں کی تعداد پچاس سے زائد ہوگئی ہے۔

مزید : صفحہ اول