رینجرز اہلکار ایم کیو ایم کے کارکنوں ہراساں کر رہے ہیں رابظہ کمیٹی

رینجرز اہلکار ایم کیو ایم کے کارکنوں ہراساں کر رہے ہیں رابظہ کمیٹی

                        کراچی(خصوصی رپورٹ)متحدہ قومی مومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے نگراں وزیر اعظم اور چیف الیکشن کمیشن آف پاکستان سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ کراچی میں ایم کیوایم کے زیر اثر پرامن علاقوں میں رینجر زکی جانب سے کارکنوں اور ہمدردوں کو ہراساں کیا جانے کا عمل بند کروایا جائے۔اپنے بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہا کہ کراچی کے تقریباً تما م ہی انتخابی حلقوں میں رینجرز کے اہلکار ایم کیوایم کے کارکنوں کو ہراساں کر رہے ہیں او رانہیں انتخابی سرگرمیوں سے روک رہے ہیں ،بعض علاقوں میں سادہ لباس میں اہلکار ایم کیوایم کے دفاترپر آنے اور جانے والوں کی تلا شی رہے ہیں اور ان کے کوائف جمع کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ دہشت گرد شہر بھر میں آزادانہ طور پر دندناتے پھر رہے ہیں اور دہشت گردی ،بھتہ خوری اور قتل وغارتگری کی کھلی کاروائیوں میں مصروف ہیں لیکن رینجرز اہلکار ان دہشت گر د عناصر کو گرفتار کرنے کے بجائے الٹا ان کی پشت پناہی کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات میں چند روز باقی رہ گئے ہیں اور ملک کی دیگر سیاسی ومذہبی جماعتوں نے الیکشن کے سلسلے میں آزادانہ انتخابی مہم کا آغا ز کیا ہوا ہے اور وہ جلسے و جلوس کر رہی ہیں ، انہیں انتخابی دفاتر بھی کھولنے کی اجازت ہے ،مگرکراچی کی نمائندہ جماعت ایم کیوایم کو انتخابی مہم چلانے کی آزادی تک نہیں دی جارہی ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔رابطہ کمیٹی نے نگراں وزیر اعظم میر ہزار خان کھوسو،اور چیف الیکشن کمیشن آف پاکستان فخر الدین جی ابراہیم سے مطالبہ کیا ہے کہ پرامن اور شفاف انتخابات کو یقینی بنانے کیلئے ایم کیوایم کے خلاف کی جانے والی سازشوں کا نوٹس لیاجائے اور رینجر ز کی جانب سے ایم کیوایم کے ذمہ داران وکارکنان اور ہمدردوں کوہراساں کرنے کے غیرجمہوری عمل کو فی الفور بند کرایا جائے۔

رابطہ کمیٹی

مزید : صفحہ اول