پےپلز پارٹی کے دورے حکومت مےں خودکش دھماکے اور ڈرون حملوں کے ریکارڈ قائم ہوئے، پرےس کانفرنس

پےپلز پارٹی کے دورے حکومت مےں خودکش دھماکے اور ڈرون حملوں کے ریکارڈ قائم ...

لاہور (آئی این پی)پیپلز پارٹی شہید بھٹو کی چیئرپرسن غنویٰ بھٹو نے کہا ہے کہ میں اسٹیبلشمنٹ کی باتیں مان لیتی تو 2002ءمیں پیپلز پارٹی کی سربراہ اور حقیقی وارث ہوتی ‘ بھٹو کی نظریئے کی تکمیل کیلئے ہماری جماعت قومی اور صوبائی اسمبلی کے 160حلقوں میں اپنے امیدوار کھڑے کر رہی ہے‘ اقتدار میں آکر بلدیاتی نظام بحال کریں گے اور جب تک شفاف انتخابات نہیں ہوتے پاکستانی عوام کی تقدیر نہیں بدل سکتی‘ دنیا اکیسویں صدی میں داخل ہو رہی ہے جب کہ پاکستان عوام آج بھی پتھر کے زمانے میں ہے‘ اقتدار اور مفادات کیلئے سیاسی جماعتیں سیٹ ایڈجسٹمنٹ کر رہی ہیں ۔ اتوار کے روز لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے غنویٰ بھٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے پانچ سالہ دور میں ملک میں خودکش دھماکےڈرون حملے اور قتل و غارت کے ریکارڈ قائم ہوئے اور حکمرانوں نے ملک اور عوام کیلئے کچھ نہیں کیا ‘ انکی ساری توجہ اپنا اقتدار بچانے پر مرکوز رہی۔ انہوں نے کہاکہ اس ملک میں جاگیرداروں اور وڈیروں کو انصاف ملتا ہے غریب آدمی آج بھی سڑک پر مر رہا ہے اور اسے کوئی پوچھنا والا نہیں۔ انہوں نے کہا کہ 2002ءمیں میری بی اے کی ڈگری کو جعلی قرار دیا گیا جس کے بعد اسٹیبلشمنٹ مجھے استعمال کرنا چاہتی تھی لیکن میں نے اس سے صاف انکار کر دیا اور اگر اسٹیبلشمنٹ کی بات مان لیتی تو میں ہی پیپلز پارٹی کی سربراہ اور حقیقی وارث ہوتی لیکن میںنے بھٹو کے نظریات کے مطابق اصولوں پر سمجھوتہ نہیں کیا۔

مزید : صفحہ آخر