وہ قدرتی غذائیں جو بانجھ پن سے متاثرہ مرد و خواتین کیلئے جادوئی اثرات رکھتی ہیں

وہ قدرتی غذائیں جو بانجھ پن سے متاثرہ مرد و خواتین کیلئے جادوئی اثرات رکھتی ...
وہ قدرتی غذائیں جو بانجھ پن سے متاثرہ مرد و خواتین کیلئے جادوئی اثرات رکھتی ہیں

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)اولاد اللہ کی بہت بڑی نعمت ہے، شاید سب سے بڑی۔ لیکن بہت سے لوگ اس سے محروم رہتے ہیں اور طرح طرح کے مہنگے علاج کروانے کے باوجود اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت حاصل نہیں کر پاتے۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ”مردوخواتین کی افزائش نسل کی صلاحیت کا ان کی غذائی عادات سے گہرا تعلق ہوتا ہے۔ ماں باپ کی غذائی عادات نہ صرف بچہ پیدا ہونے بلکہ زندگی میں بچے کی صحت کی عکاسی بھی کرتی ہیں۔ جو شادی شدہ جوڑے اولاد کی نعمت سے محروم ہیں ان کے لیے سائنسدانوں نے چند غذائی اشیاءتجویز کی ہیں جو مردوں اور خواتین دونوں میں افزائش نسل کی صلاحیت میں اضافہ کرتی ہیں۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ غیرشادی شدہ افراد کو بھی اپنی غذا میں ان اشیاءکو شامل کرنا چاہیے تاکہ مستقبل میں ان کے ہاں صحت مند بچے پیدا ہو سکیں۔ ذیل میں وہ اشیاءدرج کی جاتی ہیں۔

مگرناشپاتی(Avocado)

مگرناشپاتی کو غذائی طاقت کا پاورہاﺅس کہا جاتا ہے۔ اس میں منرلز، وٹامن، پروٹین، کاربوہائیڈریٹ اور فائبر کی بھرپور مقدار پائی جاتی ہے۔ اس میں وٹامن ای کی بہت زیادہ مقدار ہوتی ہے جو عورت کے رحم کی صحت مندی اور افزائش نسل کی قوت کے لیے بہت ضروری ہوتا ہے۔ مگر ناشپاتی میں فولک ایسڈ بھی پایا جاتا ہے جو اولاد پیدا کرنے کی صلاحیت کے لیے اکسیر کا درجہ رکھتا ہے۔

حلوہ کدو

حلوہ کدو غذائیت سے بھرپور سبزی ہے۔ اس میں کئی طرح کے وٹامنز، منرلز ، اینٹی آکسیڈنٹس اور زود ہضم فائبر پائے جاتے ہیں۔ اس میں ”بیٹا کیروٹین“ (Beta-Carotene) بھی وافر پایا جاتا ہے جو پروجیسٹران نامی ہارمون کی پیداوار بڑھانے اور مردوں میں سپرمز کی مقدار اور معیار میں اضافہ کرنے کے لیے انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔

چقندر

چقندر میں ایسے اینٹی آکسیڈنٹس پائے جاتے ہیں جو زیادہ عمر کے باعث لاحق ہونے والے بانجھ پن کو دور کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ اس میں نائٹریٹ بھی پایا جاتا ہے جو نظام دوران خون کو بہتر بناتا ہے۔ ایسی خواتین جو افزائش نسل کی قوت بڑھانے کی خواہش مند ہوں انہیں چقندر کا جوس ضرور پینا چاہیے۔

سامن مچھلی

سامن مچھلی پروٹین کے حصول کا بہت بڑا ذریعہ ہے۔ اس کے علاوہ اس میں اومیگا 3نامی غذائی جزو بھی پایا جاتا ہے جو خواتین کی افزائش نسل کی صلاحیت کے لیے انتہائی ضروری چیز ہے۔عمومی صحت کی بات کی جائے تو سامن مچھلی اس کے لیے بھی انتہائی مفید ہے۔ اس سے دل اور خون کی رگوں اور وریدوں کا نظام بہتر ہوتا ہے اور دماغ اور آنکھوں کی کارکردگی میں اضافہ ہوتا ہے۔

انڈہ

انڈے کا شمار چند غذائیت سے بھرپور اشیاءمیں کیا جاتا ہے۔ آخر اس میں ایسے غذائی اجزاءپائے جاتے ہیں جو ایک خلیے کو چوزہ بنانے میں بنیادی کردار ادا کرتے ہیں۔ انڈے میں بی کمپلیکس وٹامن”کولین“(Choline) پایا جاتا ہے جو ماں کے پیٹ میں بچہ بننے کے عمل پر انتہائی مثبت اثرات مرتب کرتا ہے۔ایک تحقیق کے مطابق اس کے اثرات پیدا ہونے والے بچے پر تمام عمر قائم رہتے ہیں۔ انڈے میں اس کے علاوہ دیگر وٹامنز اور منرلز بھی وافر پائے جاتے ہیں جو عمومی صحت کے ساتھ ساتھ افزائش نسل کی صلاحیت کے لیے بھی انتہائی اہم ہیں۔

اخروٹ

اخروٹ صحت بخش غذائی اجزاءسے لبالب بھرا ہوا خشک میوہ ہے۔ اس میں پائے جانے والے غذائی اجزاءمیں کینسر سے لڑنے کی بھی بھرپور صلاحیت موجود ہوتی ہے۔اخروٹ بالخصوص مردوں میں مثانے کے کینسر اور خواتین میں چھاتی کے کینسر کے امکانات کو انتہائی کم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔اس میں اومیگا 3چکنائی اور وٹامن ای پایا جاتا ہے جو مردوں میں سپرمز کا معیار بہتر بنانے کا کام کرتے ہیں۔ ساتھ ہی اخروٹ میں وٹامن بی اور پروٹین بھی پائے جاتے ہیں۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ اخروٹ کو اس کی غذائیت کے باعث خشک میوہ جات کا بادشاہ کہا جا سکتا ہے۔روزانہ مٹھی بھر اخروٹ کھانے سے سپرمز کا معیار بہترین ہو سکتا ہے۔

انار

انار میں وٹامن سی، وٹامن کے اور فولک ایسڈسمیت کئی دیگر وٹامنز اور منرلز پائے جاتے ہیں جو جوانی کو دیرپا کرکے انسان کو جلد بوڑھا ہونے سے بچاتے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ اجزاءکینسر کے خلاف بھی مدافعت رکھتے ہیں اور دل کی صحت اور ہڈیوں کے لیے بھی انتہائی مفید ہیں۔ قدیم ایران میں انار کو افزائش نسل کی علامت سمجھا جاتا تھا۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ خواتین اگر دوران حمل انار کا جوس پئیں تو اس سے بچے کی دماغی صحت بہتر ہوتی ہے۔

مزید : تعلیم و صحت


loading...