اوور سیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے سعودی عرب میں روڈشوز

اوور سیز پاکستانیز کمیشن پنجاب کے سعودی عرب میں روڈشوز

  



دیار غیر میں مقیم افرادکا ملک کی معیشت میں کلیدی کردار ہوتا ہے ۔ان کی طرف سے بجھوائے جانے والے پیسے سے نہ صرف ملک کے زر مبادلہ کے ذخائرمیں اضافہ ہوتا ہے، بلکہ معیشت کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنے میں بھی مددملتی ہے۔ وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف ملکی معیشت میں اوور سیز پاکستانیوں کے اس کردار کی اہمیت سے بخوبی آگاہ ہیں۔ان کی قیادت میں حکومت پنجاب نے جہاں مختلف شعبوں کی ترقی ،عوام کا معیار زندگی بلند کرنے اور صوبے کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے انقلابی اقدامات کئے ہیں وہیں اوور سیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کیلئے بھی جامع اور ٹھوس اقدامات کئے ہیں۔ وزیر اعلی پنجاب ان مسائل کی سنگینی سے بخوبی آگاہ ہیں جن سے ہمارے بیرون ملک مقیم بھائیوں اور بہنوں کو واسطہ پڑتا رہتا ہے ۔وزیر اعلیٰ سمجھتے ہیں کہ بیرون ملک مقیم افراد کے مسائل کا حل بھی اتنا ہی ضروری ہے جتنا انرجی بحران کا خاتمہ ۔محمد شہباز شریف ملک کے تمام صوبوں کے وزرائے اعلیٰ میں سے واحد وزیراعلیٰ ہیں جنہوں نے اوور سیز افراد کے مسائل کے حل کے لئے ’’اوورسیز پاکستانیز کمیشن (او پی سی)‘‘کے نام سے ایک خودمختار ادارہ قائم کیا ہے۔یہ ادارہ انتہائی تندہی سے اوور سیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لئے کوشاں ہے اور انتہائی مختصر عرصے میں اس نے ایک مؤثر فورم کی شکل اختیار کر لی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر اوپی سی نے گزشتہ ہفتے سعودی عرب کے شہروں ریاض،دمام،مدینہ منورہ اورجدہ میں روڈ شوز کا اہتمام کیا جس کا مقصد سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کے مسائل کاان کی دہلیز پر حل اور انہیں اوپی سی کی کارکردگی سے آگاہی فراہم کرنا تھا۔سعودی عرب سے ہمارا رشتہ صرف بردارانہ تعلقات کی وجہ سے استوار نہیں ،ہماری دینی اور روحانی عقیدت بھی اس ملک کے ساتھ وابستہ ہے ۔روڈ شو زکے لئے سعودی عرب کے انتخاب کی ایک اور اہم وجہ یہ تھی کہ پاکستان میں آنے والے زرمبادلہ کا 63 فیصد حصہ سعودی عرب میں مقیم پاکستانی بھجواتے ہیں۔ کمیشن کے وائس چیئر مین کپیٹن (ر) شاہین خالد بٹ کی سربراہی میں سعودی عرب جانے والے اس وفد میں راقم السطور بطور کمشنر اور ڈی آئی جی و ایڈیشنل ڈائریکٹر جنرل (پولیس میٹرز)احمد مبین شامل تھے۔ ان روڈ شوز میں پاکستانیوں کی ایک بہت بڑی تعداد نے شرکت کی ،جبکہ ان کی سب سے اہم خصوصیت ان میں پاکستان کی تمام سیاسی جماعتوں بشمول پیپلز پارٹی ، تحریک انصاف ،جمعیت علمائے اسلام ، اے این پی ، جماعت اسلامی کے نمائندوں اور سعودی عرب میں پاکستان کی مختلف تنظیموں جن میں بزنس فورم ،انویسٹرز فورم، جرنلسٹ فورم ،پاک سعودی فورم ،ڈاکٹرز فورم ، انجینئرز فورم اورکشمیر کمیٹی کے ارکان بھر پور شرکت تھی ۔ ان روڈ شوز کے انعقاد او رانہیں کامیاب بنانے کے لئے پاکستان مسلم لیگ (ن)سعودی عرب کے عہدیداروں نے بھر پور کوشش کی، جبکہ مسلم لیگ (ن) آزاد کشمیر کے نمائندے بھی ان میں شریک ہوئے ۔

ان تمام سیاسی جماعتوں کے نمائندوں کا مشترکہ موقف تھا کہ اوورسیز پاکستانیز کمیشن قائم کر کے وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف نے دیگر تمام صوبوں پر سبقت حاصل کی ہے ۔مجھے ریاض کے روڈ شو کے موقع پر ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے اس رکن کے یہ الفاظ شائد کبھی نہیں بھولیں گے کہ اوورسیز پاکستانیز کمیشن کی دیار غیر میں مقیم پاکستانیوں کے حوالے سے خدمات دیکھ کر مجھے آج اپنے پاکستانی ہونے پر فخر محسوس ہورہا ہے ۔ اوورسیز پاکستانیوں کے خیال میں پہلی بار ایسا ہوا تھا کہ سعودی عرب میں کوئی ان کی بات سننے اور ان کے مسائل حل کرنے آیا ہے اوراب انہیں یہ محسوس ہو رہا ہے کہ پنجاب میں اوورسیز پاکستانیز کمیشن کے دفتر کی صورت میں ایک ایسی جگہ موجود ہے جہاں وہ اپنے کسی بھی مسئلے کے حل کے لئے کسی وقت بھی رابطہ کر سکتے ہیں ۔

روڈ شوز کے دوران ہم وطنوں کو یہ بتایا گیا کہ اوپی سی کو سعودی عرب میں مقیم 328پاکستانیوں کی شکایات موصول ہوئی ہیں ۔ ریاض میں مقیم پاکستانیوں کی 40 شکایات پر کارروائی مکمل کر لی گئی ہے ،جبکہ 63 شکایات پر کارروائی جاری ہے۔ جدہ کے پاکستانیوں کی 40 شکایات پر کارروائی مکمل کر لی گئی ہے ،جبکہ 30 پر کارروائی جاری ہے۔مدینہ منورہ میں مقیم 13 پاکستانیوں کی شکایات کا ازالہ کیا جا چکا ہے ،جبکہ 8 کی درخواستوں پر کارروائی جاری ہے۔اسی طرح اوپی سی کی کوششوں سے دمام کے 8پاکستانیوں کی شکایات حل کی جاچکی ہیں، جبکہ 11 پر کارروائی جاری ہے۔مزید برآں سعودی عرب میں مقیم 27 پاکستانیوں کی شکایات کے معاملات عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔روڈ شوز کے دوران او پی سی کے ذمہ داران نے ریاض،دمام،مدینہ منورہ اور جدہ کے اجتماعات میں موجود اہل وطن کو یہ بتایا کہ پنجاب حکومت نے صوبے میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے فروغ کے لئے ایک انتہائی موافق ماحول پیدا کیا ہے اوروہ پنجاب میں موجود سرمایہ کاری کے ان منافع بخش مواقع سے بھرپور فائدہ حاصل کر سکتے ہیں۔انہیں بتایا گیا کہ وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے پنجاب بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ کے نام سے ایک ایسا ادارہ قائم کیا ہے جو ملکی وغیر ملکی انویسٹرز کو سرمایہ کاری اور نئے پراجیکٹس لگانے کے حوالے سے بھرپور فنی وتکنیکی معاونت فراہم کررہا ہے۔پنجاب حکومت نے صوبے میں بزنس فرینڈلی پالیسیاں متعارف کروائی ہیں اور انویسٹرز کو متعدد مراعات فراہم کی جارہی ہیں۔

اوورسیز پاکستانیز کمیشن پنجاب اگرچہ ایک صوبائی ادارہ ہے لیکن اس کی کارکردگی اور اوور سیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لئے اس کے مؤثراقدامات کی پورے ملک میں تحسین کی جا رہی ہے۔ حکومت آزاد جموں و کشمیر نے بھی اوپی سی پنجاب کا ماڈل اپنایا ہے ۔اس ضمن میں آزاد جموں و کشمیر کے مختلف اضلاع میںآن لائن سسٹم متعارف کرانے کے لئے اوپی سی نے حکومت آزاد کشمیر کو اپنا بھر پور تعاون اور عملی معاونت فراہم کی ہے۔ اوپی سی تارکین وطن کے مسائل کے حل کے لئے انفارمیشن ٹیکنالوجی سے بھرپور استفادہ کر رہا ہے۔ تارکین وطن کی شکایات کی آن لائن وصولی اور حل کے لئے کمپلینٹ پورٹل قائم کیاگیا ہے۔تارکین وطن کی شکایات متعلقہ اداروں تک پہنچاکر ان کی الیکٹرانک مانیٹرنگ کی جاتی ہے۔اضلاع کی سطح پر بھی اوورسیزکمیٹیاں قائم کی گئی ہیں۔ وزیراعلی پنجاب محمد شہباز شریف خود ہر ماہ اس کمیشن کی کارکردگی کا جائزہ لیتے ہیں۔ کمیشن پنجاب اورملک میں سرمایہ کاری کے لئے اوور سیز پاکستانیوں کی حوصلہ افزائی اور رہنمائی بھی کررہا ہے۔پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے والے اوورسیز پاکستانیو ں کے لئے انوسٹمنٹ ہیلپ ڈیسک بھی قائم کیا گیا ہے ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب صرف سڑکوں ،انڈر پاسسز ،پلوں اور رنگ روڈزکی تعمیر کے حوالے سے ہی شہرت نہیں رکھتے وہ ملک و قوم کی تقدیر بدلنے کے لئے بنیادی اور اہم اداروں کے قیام کے لئے بھی ہمیشہ سے کوشاں رہے ہیں۔ باقاعدہ قانون سازی کے بعد اوورسیز پاکستانیز کمیشن اب مستقبل بنیادوں پر کھڑا ایک مضبوط و مستحکم ادارہ ہے۔پاکستان سے دور بسنے والے پاکستانیوں کے دلوں میں اپنے وطن کے لئے محبت اور اس کے مسائل پر دکھ کے جو جذبات پائے جاتے ہیں، ان کی شدت اور گہرائی سے وزیر اعلی پنجاب بخوبی آگاہ ہیں۔ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف نے اپنے گزشتہ دور حکومت میں ایئر پورٹس پر گرین چینل کا اجراء کیا تھا جس کے ذریعے بیرون ملک سے اشیاء لانے میں آسانیاں پیدا کی گئی اور اب پنجاب میں مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے ہی اوور سیز پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لئے ایک خود مختار ادارہ قائم کیا ہے ۔بلاشبہ اوپی سی کا قیام دیارغیر میں بسنے والے پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لئے وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کی ایک شاندار کاوش ہے۔

مزید : کالم


loading...