دانتوں کے علاج میں عطائیت خطرناک بیماریاں پھیلانے کا موجب ہے، ڈاکٹر رانا ظفر

دانتوں کے علاج میں عطائیت خطرناک بیماریاں پھیلانے کا موجب ہے، ڈاکٹر رانا ...

  



لاہور (پ ر)دانتوں کے علاج کے شعبے میں عطائی اور غیر مستند معالجین خطر ناک بیماریاں پھیلانے کا سبب بن رہے ہیں۔ بالخصوص اس شعبے میں موجود اسسٹنٹ، ٹیکنیشنر اور ہائی جینسٹ جب از خود ایک مستندڈینٹسٹ کی حیثیت سے علاج شروع کر دیتے ہیں تو انسانی جان کو داؤ پر لگا دیتے ہیں۔ ان خدشات کا اظہار پاکستا ن ڈینٹل کونسل اورپنجاب ڈینٹل کونسل کے ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس منعقدہ 14اپریل کو لاہور میں کیا گیا ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر رانا ظفر سیکر یٹری پنجاب ڈینٹل ایسوسی ایشن نے اس بات پر زور دیا کہ پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن صحت کے مختلف شعبوں میں کام کرنے والے غیر مستند معالجین اور عطائیوں کے خلاف کاروائی کر رہا ہے۔

وہاں ڈینٹسٹری کے شعبے میں کام کرنے والے نام نہاد معالجین کو بھی چیک کررہا ہے ۔

جس سے مثبت نتائج سامنے آ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ایسے عطائیوں کے خاتمے کے لیے کمیشن سے رجسٹر یشن اور لائسنسگ بڑا اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔ پروفیسر ڈاکٹر وحید الحمید پرنسپل ڈینٹل کالج لاہورو سابق صدر پاکستان ڈینٹل اسویسی ایشن نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ زیادہ سے زیادہ مستند دانتوں کے ڈاکٹر چھوٹے شہراور قصبوں میں جا کر اپنی خدمات پیش کریں جس سے عطائیت کے خاتمے میں مدد ملے گی ۔اجلاس میں یہ بھی بتایا گیا کہ ان دانتوں کے معالج عطائیوں کی غفلت اور نا اہلی کی بنا پر ہونے والے واقعات ، مستند اور ماہرین دانتوں کے معالجین کے مقدس پیشے کو بھی بدنام کرتے ہیں۔ یہ بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ ایسے عطائی کسی ڈینٹل سرجن کا محض نام استعمال کرکے خودعلاج شروع کر دیتے ہیں۔ یہ ایک معاشرتی مسئلہ بھی ہے کہ لوگ آسانی سے ایک مستند اور غیر مستند ڈینٹیسٹ میں فرق نہیں کر پا تے۔ ایک کوالیفا ئیڈ ماہر دانتوں کا ڈاکٹر علاقے سے کئی عطائی دندان معالجین کے خاتمے میں معاون ثابت ہو سکتا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر محمد اجمل خان،چیف آپریٹنگ آفیسر پنجاب ہیلتھ کئیر کمیشن نے بتایا کہ کمیشن نے گز شتہ دو ماہ میں 850ڈاکٹرز رجسٹر کئے ہیں جن میں67ڈینٹل سرجن ہیں۔ ڈینٹل کلینکس اور دیگرعلاج گاہوں کی رجسٹریشن انہیں قانونی تحفظ فراہم کرتی ہے۔ اجلا س میں پروفیسر ڈاکٹر وحید الحمید، ڈاکٹر ارحم چوہان ، ڈاکٹر بابر سبزواری، ڈاکٹررانا ظفر اقبال،ڈاکٹر اسرار احمد، ڈاکٹر حافظ شاکر محمود، ڈاکٹر واصف علی خان،ڈاکٹر فیصل میاں اورڈاکٹر فاروق نے شرکت کی۔ شرکاء نے کمیشن کی خدمات کو سراہتے ہوئے اپنے شعبے سے متعلق ڈاکٹروں اور ڈینٹل کلینکس کی زیادہ سے زیادہ رجسٹریشن کا یقین دلایا اور دانتوں کے علاج میں عطائیت کے خاتمے کے عزم کا اعادہ کیا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...