پاناما لیکس :مسلم لیگ (ن) نے قیادت کے دفاع کا فیصلہ کر لیا ،انصاف نہ ملا تو دھرنا آخری کآپشن ہو گا :عمران خان

پاناما لیکس :مسلم لیگ (ن) نے قیادت کے دفاع کا فیصلہ کر لیا ،انصاف نہ ملا تو ...

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)حکومت کا پانامہ لیکس پر اپوزیشن کی جانب سے مذموم مقاصد کی خاطر وزیراعظم کی ذات اور خاندان پر لگائے جانے والے مضحکہ خیز الزامات کا ہر فورم پر موثر جواب دینے کا فیصلہ کر تے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کے اقتصادی ایجنڈے کو سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ، عوامی ترقی اور تعمیر کے سفر کو الزامات اور اپنی ذاتی خواہشات کی بھینٹ چڑھانے کی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا،حکومت نے اس سے پہلے بھی ایسی سازشوں اور سازشی عناصر کا مقابلہ کیا اور سرخر ہوئی اور اس مرتبہ بھی تمام سیاسی اور قانونی محاذوں پر ان سازشوں کا مقابلہ کیا جائے گا۔ جمعرات کو وزیرخزانہ اسحاق ڈار کی زیر صدارت مسلم لیگ (ن )کے سنیئر رہنماؤں کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف،وزیراعظم کی صاحبزادی مریم نواز شریف ،وفاقی وزراء سینیٹر پرویز رشید،جنرل (ر)عبدالقادر بلوچ، زاہد حامد، خواجہ سعد رفیق،خواجہ محمد آصف،اٹارنی جنرل آف پاکستان ،سینیٹر مشاہد اللہ نے شرکت کی۔اجلاس میں وزیراعظم نواز شریف کی مکمل اور جلد صحت یابی کیلئے دعا کی گئی،اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اپوزیشن کی جانب سے مذموم مقاصد کی خاطر وزیراعظم کی ذات اور خاندان پر لگائے جانے والے مضحکہ خیز الزامات کا ہر فورم پر جواب دیا جائے گا،اجلاس کے شرکاء کا کہناتھا کہ مسلم لیگ(ن) اس سے پہلے بھی اس طرح کی تمام سازشوں اور سازشی عناصر کا مقابلہ کیا اور اس میں سرخرو ہوئے اور اس مرتبہ بھی تمام سیاسی اور قانونی محاذوں پر ان سازشوں کا مقابلہ کیا جائے گا۔اجلاس کے شرکاء نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ ایک مرتبہ پھر پاکستان کے اقتصادی ایجنڈے کے سبوتاژ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور عوامی ترقی اور تعمیر کے سفر کوبھی،الزامات اور اپنی ذاتی خواہشات کی بھینٹ چڑھانے کی کوشش کی جارہی ہے، اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ عوام اور تمام سیاسی قوتوں کو ملکی ترقی اور خوشحالی پر اس مذموم ایجنڈے کے اثرات سے آگاہ کیا جائے گا اور انہیں اعتماد میں لیا جائے گا، اجلاس میں وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے شرکاء کو وزیراعظم نواز شریف کی جانب سے دی جانے والی ہدایات پہنچاتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے کہاہے کہ سازشیوں کو اہمیت نہ دی جائے اور اس پر وقت ضائع کرنے کی بجائے پوری توجہ ملکی ترقی کے منصوبوں کو مکمل کرنے پر دی جائے۔

لندن/لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک،نمائندہ خصوصی) تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے ہیتھرو ایئر پورٹ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری دنیامیں پاناما لیکس پر ہلچل مچی ہوئی ہے۔ وزیراعظم اور ان کے خاندان پر بہت بڑے الزامات ہیں۔ ریٹائرڈ جج کی سربراہی میں کمیشن قبول نہیں جبکہ لندن میں 3 فرانزک کمپنیوں سے ملاقات ہو گی۔ انہوں نے کہا پاناما لیکس کے معاملے پر آزاد کمیشن انکوائری کرے ہم بھی مدد کریں گے۔ چیف جسٹس کی سربراہی میں تحقیقات ہوں تو دھرنا نہیں ہو گا اور اگر انصاف نہ ملا تو دھرنا آخری آپشن ہو گا۔ عمران خان نے کہا 24 اپریل کا جلسہ ایف نائن میں ہی کریں گے اس حوالے سے جہاز میں وزیر داخلہ سے بات کی ہے قبل ازیں لندن روانگی سے قبل لاہور ائر پورٹ پر میڈیا سی گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب کرپشن کی بات کی جائے تو اس وقت جمہوریت خطرے میں پڑ جاتی ہے ،انہوں نے کہاکہ جمہوریت تو آئس لینڈ میں ہے ،پہلانام آتے ہی استعفیٰ دے دیا اور جمہوریت تو برطانیہ میں ہے، ڈیوڈ کیمرون نے خود جاکر ہاؤس آف کامن میں کھڑے ہو کر اپنی صفائی پیش کی ہے اور ایک ایک چیز بتائی ہے اور اپنے ٹیکس ریٹرن بھی اس نے چھاپے ہیں یہ ہے جمہوریت ، جب پاکستان میں کرپشن کی بات آئے تو کہتے ہیں جمہوریت خطرے میں ہے یہ جمہوریت نہیں ، جمہوریت کی آڑ میں اپنی کرپشن کو چھپاتے ہیں اوراپنا احتساب سے بچنے کی کوششیں شروع ہو جاتی ہیں اورپھر سب کہتے ہیں کہ جمہوریت خطرے میں ہے ، عمران خان نے کہاکہ اپوزیشن اور حکومت دونوں پانامہ لیکس کے معاملے پر اپنے لیڈروں کی کرپشن چھپانے کی کوشش کررہے ہیں، لیکن اب ان کو بھاگنے نہیں دیں گے اور بھر پور احتساب کیا جائے گا، انہوں نے کہاکہ پاکستان سے پیسہ چوری ہو کر باہر جار ہا ہے اور ملک کو مقروض کر دیاہے اور یہ لوگ پیسہ ملک سے باہر بھیج رہے ہیں ، اب کرپشن کرنے والوں کو بے نقاب کرنے کا پاکستانیوں کو ایک سنہری موقع ملا ہے ، انہوں نے کہاکہ صاحب اقتدار آتے ہیں ملک کو لوٹنے کے لئے اور پھر سارا پیسہ باہر لے جا کر محلات بناتے ہیں اور عیاشیاں کرتے ہیں اور موقع ملاہے ان کا احتساب کریں گے، انہوں نے کہاکہ لندن میں دو سے تین فرانزک کمپنیوں سے بات چیت کرچکے ہیں، ان کمپنیوں کو اورسیز پاکستانی پیسے ادا کریں گے، اب ہم ان کو چھوڑنے والے نہیں، اس معاملے پر سنجیدگی سے تحریک چلائیں گے اور ان کو بے نقاب کریں گے، اس موقع پر جہانگیر ترین ، عبدالعلیم خان، عون چوہدری اور شعیب صدیقی بھی موجود تھے ۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...