کراچی کے شہری پانی کی بوند بوند کو ترس رہے ہیں،عارف علوی

کراچی کے شہری پانی کی بوند بوند کو ترس رہے ہیں،عارف علوی

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی سینئر رہنما و رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ کراچی کے شہری پانی کی بوند بوند کے لئے ترس رہے ہیں لیکن حکمرانوں کے کانوں میں جو تک نہیں رینگتی ۔ گرمی کا موسم شروع ہوتے ہی پانی اور بجلی کی قلت میں روز بروز اضافہ ہوتا جا رہا ہے ۔جو انتہائی قابل مذمت اور حکمرانوں کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہے ۔اگر پانی اور بجلی کی عدم فراہمی کے باعث شدت گرمی سے کوئی بھی جان لیوا حادثہ رونما ہوا تو اس کی ذمہ داری حکومت سندھ اور متعلقہ اداروں پر عائد ہوگی ۔یہ باتیں انہوں نے گزشتہ روز اپنے حلقہ انتخابNA250 کے مختلف علاقوں کے دورے کے موقع پر علاقہ معززین اور پارٹی کارکنان سے بات چیت کرتے ہوئے کہیں۔ اس موقع پر رکن سندھ اسمبلی ثمر علی خان، پی ٹی آئی کے رہنما افتخار فاروقی، کلفٹن کنٹونمنٹ بورڈ کے کونسلر اسلم خالق، ادیبہ عارف حسن، محمد جمیل ،محمد احمداور دیگر رہنما بھی شریک تھے ۔ڈاکٹر عارف علوی نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت اور واٹر بورڈ انتظامیہ کراچی کے شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی میں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے ۔شہر میں پانی کا اصل بحران کی وجہ واٹر بورڈ انتظامیہ کی نا اہلی او رپانی کی غیر منصفانہ تقسیم ہے ۔ شہر کے کئی علاقے 2،2مہینے تک پانی جیسی ضروریات زندگی سے محروم رہتے ہیں اور کئی علاقوں میں دوسرے اور تیسری دن پانی کی فراہمی جاری ہے ۔پانی کی قلت پر قابو پانے اور عملی اقدامات اٹھانے کے لئے تحریک انصاف کے منتخب نمائندوں نے ہر فورم پر آواز اٹھائی لیکن حکمران اور واٹر بورڈ انتظامیہ ٹس سے مس نہیں ہوئی۔اب آخری بار حکومت سندھ اور واٹر بورڈ انتظامیہ کو تنبیہ کرتے ہیں کہ وہ اپنا قبلہ درست کریں اور شہر کراچی میں پانی جیسی ضرورت کے لئے عملی اقدامات اٹھا ئے جائیں اورK4منصوبے پر ہنگامی بنیادوں پر کام شروع کیا جائے ۔ اگر حکمرانوں نے ہوش کے ناخن نہیں لئے تو تحریک انصاف شہریوں کے ساتھ مل کر بھر پور عوامی احتجاج شروع کرے گی اور پھر حالات کی تمام تر ذمہ داریاں حکومت سندھ اور واٹر بورڈ انتظامیہ پر عائد ہوں گی ۔

مزید : کراچی صفحہ آخر


loading...