ڈاکٹر صحت کے شعبہ پر عوام کے اعتماد کو بحال کرنے کیلئے کردار ادا کریں :شہرام ترکئی

ڈاکٹر صحت کے شعبہ پر عوام کے اعتماد کو بحال کرنے کیلئے کردار ادا کریں :شہرام ...

  



پشاور( پاکستان نیوز)صحت کے شعبے کو موجودہ صوبائی حکومت نے مستحکم کیاہے ۔ماضی میں اس کی مثال نہیں ملتی ،حکومت نے حکومت نے اپنے حصے کاکام کرلیا ہے اب ڈاکٹر وں کو چاہئے کہ وہ صحت کے شعبے پر عوام کااعتماد بحال کرنے کے لئے اپنے حصے کاکردار اداکریں۔شہرام تراکئی خیبرپختونخوا کے سینئر وزیر برائے صحت شہرام خان ترکئی نے کہاہے کہ موجودہ صوبائی حکومت صحت کے شعبے کو مستحکم کرنے اوراس شعبے سے وابستہ لوگوں کی بہتری کے لئے وہ موثر اور نتیجہ خیز اقدامات اٹھا ئے ہیں جن کی ماضی میں کوئی مثال نہیں ملتی ۔صحت کے شعبے پر عوام کااعتماد بحال کرنے کے لئے حکومت نے اپنے حصے کاکام کرلیا ہے اب ڈکٹروں اور اس شعبے سے وابستہ دیگر عملے کو چاہئے کہ وہ ایک دو قدم آگے بڑھیں اور حکومت کے ساتھ مل کر عوام کوصحت کا ایک مستحکم نظام دینے میں اپنا اہم کردار اداکریں۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گذشتہ روز خیبرگرلز میدیکل کالج پشاور کے کنوکیشن کے موقع پر بحیثیت پروچانسلر خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی وزیر نے کالج سے فارغ التحصیل ہونے والے نوجوان ڈاکٹروں پر زوردیاکہ وہ عملی زندگی میں اپنے اُس حلف کی پاسداری کریں جو وہ ڈگری لیتے وقت اٹھاتے ہیں کیونکہ اس حلف کی پاسداری کرتے ہوئے وہ ایک بہترین ڈاکٹر ہونے کے ساتھ ایک بہتری انسان بھی بن سکتے ہیں اور دکھی انسانیت کی بہتر انداز میں خدمت بھی کرسکتے ہیں۔ شہرام خان ترکئی نے اس بات پر افسوس کااظہار کیاکہ سرکاری ہسپتالوں میں مریضوں کو وہ توجہ اور دیکھ بال نہیں ملی رہی ہے جس کے وہ بحیثیت انسان اور بحیثیت شہری مستحق ہیں جس کی بنیادی وجہ نظام کی خرابی ہے اور موجودہ صوبائی حکومت کئی عشروں سے جاری اس نظام کو تبدیل کرکے ایک ایسا نظام لانے کے لئے اپنی تمام ترکوششیں کررہی ہے جس میں مریض کی دیکھ بال سب سے مقدم اور سب سے اہم ہوگی اور وہ دن دورنہیں جب ہم صحت کے نظام پر عوام کااعتماد مکمل طورپر بحال کرنے میں کامیاب ہونگے۔ صحت کے شعبے میں موجودہ صوبائی حکومت کے اصلاحاتی اقدامات کاتذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مضافاتی اوردوردراز علاقوں کے ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کے لئے پُرکشش مالی مراعات دی جارہی ہیں تاکہ ان ہسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کمی کو دور کرکے وہاں کے عوام کو علاج معالجے کی تمام ترسہولیات ان کی دہلیز پر فراہم کی جاسکے اسی طرح بڑے اور تدریسی ہستپالوں میں بھی کام کرنے والے ڈاکٹروں کی تنخواہوں کوبڑھانے کے لئے متعلقہ بورڈز آف گورنر کو پورا اختیار دے دیاگیا ہے ۔شہرام خان ترکئی نے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں کے معاملات کوکمپیوٹرائزڈ کیاجارہا ہے ، ڈائیگناسٹک سروس کو بہتر بنایا جارہاہے ۔ جبکہ ڈاکٹروں ،پیرا میڈکس اور نرسز کی تعداد میں خاطرخواہ اضافہ کیاجارہا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...