پنجاب پولیس کی ناکامی کے بعد راجن پور میں فیصلہ کن آپریشن کی تیاریاں مکمل ، کمانڈوز سمیت پاک فوج موقع پر پہنچ گئی ، مزید نفری طلب

پنجاب پولیس کی ناکامی کے بعد راجن پور میں فیصلہ کن آپریشن کی تیاریاں مکمل ، ...
پنجاب پولیس کی ناکامی کے بعد راجن پور میں فیصلہ کن آپریشن کی تیاریاں مکمل ، کمانڈوز سمیت پاک فوج موقع پر پہنچ گئی ، مزید نفری طلب

  



اوکاڑہ ، راجن پور(مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب پولیس کی ناکامی کے بعد راجن پور میں کچے کے علاقے میں جرائم پیشہ عناصر کے خلاف آپریشن کے لیے ضرار کمانڈوز کے دوگروپوں سمیت پاک فوج کے 100جوان پہنچ گئے جبکہ ملتان سے 33 پنجاب رجمنٹ کی دوکمپنیاں بھی علاقے میں پہنچ گئیں ،آپریشن میں جوانوں کو چھ ہیلی کاپٹر کی معاونت بھی حاصل ہوگی جبکہ اوکاڑہ سے پاک فوج کی ایک بٹالین براستہ سڑک روانہ ہوگئی ہے اور آپریشن کیلئے آئندہ 24سے 48گھنٹوں کو اہم قراردیاجارہاہے ۔

تفصیلات کے مطابق چھوٹوگینگ کیخلاف پنجاب پولیس کے آپریشن کے دوران پولیس اہلکاروں کی ’شہادت‘ اور یرغمال بنائے جانے کے بعد مقامی پولیس نے آئی جی پنجاب سے فوج کی مدد لینے کی درخواست کی جس کی منظوری ملنے کے بعد پاک فوج نے کمر کس لی اورآپریشن ’ضرب آہن‘ کے اٹھارہویں روز ضرار کمانڈوز کے دوگرپوں سمیت پاک فوج کے 100اہلکار دوہیلی کاپٹرز کے ذریعے رات گئے رحیم یارخان کے فرید ایئربیس پہنچے جہاں سے راجن پور روانہ ہوگئے ۔ ملتان سے 33 پنجاب رجمنٹ کی دوکمپنیاں بھی موقع پر پہنچ چکی ہیں جبکہ اوکاڑہ سے پاک فوج کی ایک بٹالین مزید طلب کرلی گئی جس کے بعد 500جوان براستہ سڑک راجن پور روانہ ہوگئے ۔ سیکیورٹی ذرائع کے مطابق بیک اپ سپورٹ کے لیے رینجرز کے جوان بھی موجود ہوں گے ، پنجاب رینجرز کی 9کمپنیاں علاقے میں موجود ہیں ۔

دوسری طرف صوبائی وزیرقانون رانا ثناءاللہ کاکہناتھاکہ چھوٹو گینگ کو بھاگنے نہیں دیں گے ، آئندہ دوسے تین دن میں چھوٹو گینگ ہتھیارڈالے گا یاپھر جہنم واصل ہوجائے گا۔ پنجاب پولیس کی طرف سے وائرلیس پیغامات کے ذریعے چھوٹوگینگ سے ہونیوالے مذاکرات میں چھوٹو نے مطالبہ کیا کہ پولیس کے ساتھ ملنے والے تین گینگز کیخلاف بھی کارروائی کی جائے اور علاقے سے پولیس کو ہٹایاجائے ۔ پولیس کیساتھ ملنے والے گینگز کیخلاف کارروائی نہ ہونے پر تجزیہ نگاروں نے بھی سوالات اٹھائے ہیں ۔

مزید : قومی /اہم خبریں